اسرائیلی پی ایم نیتن یاہو کی صلاح کار بھی کورونا پازیٹو، اب نیتن یاہو کا ہوگا ٹیسٹ!

اسرائیلی پی ایم آفس کے مطابق رویکا پلچو کے رابطے میں آنے والے تمام افراد اب 14 دنوں کے لیے خود کو الگ تھلگ رکھیں گے۔ پلچو نے پی ایم نیتن یاہو سے بھی ملاقات کی تھی اور اب ان کا بھی کورونا ٹیسٹ ہوگا۔

اسرائيلی وزير اعظم بینجمن نیتن یاہو
اسرائيلی وزير اعظم بینجمن نیتن یاہو
user

یو این آئی

یروشلم: اسرائیل کے وزیر اعظم بنجامن نتن یاہو کی صلاح کار رویکا پلچو کورونا وائرس (کووِڈ-19) سے متاثر پائی گئی ہیں۔ اسرائیل کی مقامی میڈیا ’چینل 12‘ کے مطابق انہوں نے تین روز قبل نتن یاہو سے ملاقات کی تھی۔ امکان ظاہر کیا جا رہا ہے کہ جلد ہی اسرائیل کے وزیر اعظم نیتن یاہو اپنا کورونا ٹیسٹ کرائیں گے حالانکہ گزشتہ 15 مارچ کو بھی انھوں نے ٹیسٹ کرایا تھا جس کا نتیجہ منفی آیا تھا۔ یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ نیتن یاہو خود کو آئسولیشن میں رکھ سکتے ہیں۔ پیر کو ٹائمس آف اسرائیل کی شائع رپورٹ کے مطابق رویکا پلچو کورونا وائرس چیک اپ میں پازیٹیو پائی گئی ہیں۔ کچھ دنوں پہلے ہی ان کے شوہر کو کوونا وائرس کے سبب اسپتال میں داخل کروایا گیا تھا۔

اسرائیل کے وزیر اعظم نتن یاہو کے دفتر کے ذرائع کے مطابق رویکا پلچو کے رابطے میں آنے والے تمام افراد کو اب 14 دنوں کے لیے خود کو الگ تھلگ رکھنا ہوگا۔ رویکا پلچو نے جمعرات کو وزیر اعظم سے ملاقات کی تھی۔ اسرائل کی وزارت صحت کے مطابق ملک میں اتوار کو کورونا وائرس کے 382 نئے معاملے سامنے آنے کے بعد کل متاثرین کی تعداد چار ہزار سے زیادہ ہوگئی ہے۔ اس وبا کے سبب اب تک ملک میں 15 افراد کی موت ہوچکی ہے۔ قابل ذکر ہے کہ برطانیہ کے پرنس چارلس اور وزیر اعظم بورس جانسن سمیت دنیا کے کئی بڑے اشخاص بھی کورونا پازیٹیو پائے گئے ہیں۔