عراق: تین بم دھماکوں سے لرزا بغداد، 6 افراد ہلاک، 17 زخمی

ان بم دھماکوں کی فوری طور پر کسی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے لیکن داعش نے چونکہ بغداد اور دیگر شہروں میں ایسے ہی حملے انجام دیئے ہیں، الہذا اسی پر شک ظاہر کیا جا رہا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

بغداد: عراق کے دارالحکومت بغداد میں منگل کی رات تین مختلف بم دھماکے ہوئے جن میں کم از کم 6 افراد ہلاک اور 17 زخمی ہوگئے۔ عراقی وزارت داخلہ کی جانب سے یہ معلومات فراہم کی گئی۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ شمالی بغداد میں الشعب کالونی میں موٹرسائیکل پر نصب بم پھٹنے سے تین افراد ہلاک اور پانچ زخمی ہوگئے۔ جنوب مغربی علاقے البیاع میں بھی موٹرسائیکل پر نصب بم پھٹ گیا جس کے نتیجے میں 6 افراد ہلاک اور 9 زخمی ہوگئے۔ مشرقی بلدیہ محلے میں ایک دیسی ساختہ بم پھٹا جس سے ایک شخص ہلاک اور چار زخمی ہوگئے۔


ایک اور دھماکہ جنوب مغربی بغداد میں ہوا، جس میں چار افراد زخمی ہو گئے۔ اس کے علاوہ تیسرا بم دھماکہ دارالحکومت کے مشرقی علاقہ میں ہوا، اس میں بھی چار افراد زخمی ہو گئے۔

ان بم دھماکوں کی فوری طور پر کسی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے لیکن داعش نے چونکہ بغداد اور دیگر شہروں میں ایسے ہی حملے انجام دیئے ہیں، الہذا اسی پر شک ظاہر کیا جا رہا ہے۔ یکم اکتوبر سے عراق میں حکومت کے خلاف مظاہرے بھی جاری ہیں جن میں سیکڑوں افراد ہلاک اور ہزاروں زخمی ہوچکے ہیں۔


عراقی سیکورٹی فورسز کی جانب سے آئی ایس کو شکست دینے کے بعد اگرچہ 2017 کے آخر میں عراق میں صورتحال میں بہتری آئی ہے لیکن عراق میں وقتاً فوقتاً حملے ہوتے رہتے ہیں، جو حال ہی میں حکومت کے خلاف وسیع پیمانے پر ہونے والے مظاہروں کا شکار ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔