یوکرین طیارہ حادثہ معاملہ پر ایران شفاف جانچ کو یقینی بنائے: اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کے ترجمان اسٹیفن ڈوجارک نے کہا کہ ’’ہم نے اس بات کا نوٹس لیا ہے جس میں ایران کی حکومت کی جانب سے یہ اعلان کیا گیا ہے کہ یوکرین کے طیارہ کو غلطی سے مار گرایا گیا تھا ‘‘۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ نے امید ظاہر کی ہے کہ ایران یوکرین کے طیارہ کو مار گرائے جانے کی شفاف اور مکمل جانچ پڑتال کویقینی بنائے گا۔ اقوام متحدہ کے ترجمان اسٹیفن ڈوجارك نے پیر کو ایک پریس کانفرنس میں یہ بات کہی۔

اسٹیفن ڈوجارك نے کہا ’’ہم نے اس بات کا نوٹس لیا ہے جس میں ایران کی حکومت کی جانب سے یہ اعلان کیا گیا ہے کہ یوکرین کے طیارہ کو غلطی سے مار گرایا گیا تھا۔ ہم چاہتے ہیں کہ ایران یوکرین کے طیارے کو مار گرائے جانے کی شفاف اور مکمل جانچ پڑتال یقینی بنائے‘‘۔ اقوام متحدہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ اس طرح کی تحقیقات بین الاقوامی شہری ہوا بازی کانفرنس کے معاہدہ -13 کے مطابق کی جانی چاہیے۔

واضح رہے کہ گزشتہ بدھ کو ہوئے یوکرین طیارہ حادثہ میں طیارہ میں سوار تمام مسافروں اور ہوائی جہازکے عملہ سمیت کل 176 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ مردوں میں زیادہ تر لوگ ایران اور کینیڈا کے تھے۔ یہ حادثہ اسی دن ہوا جب ایران نے عراق میں امریکی ٹھکانوں کو ہدف بنا کر 15 سے زیادہ میزائل داغے تھے۔ پاسداران انقلاب نے ایک بیان جاری کر کے یوکرین کے بوئنگ 737 مسافر طیارے کو غلطی سے مار گرانے کی پوری ذمہ داری لی ہے۔