ہندوستان اور سعودی عرب کے درمیان حج 2020 کے معاہدے پر دستخط

مختار عباس نقوی نے کہا کہ حج گروپ آرگنائزرس کو بھی صد فیصد ڈیجیٹل کرکے پورٹل سے منسلک کیا گیا ہے، جس کی وجہ سے حج گروپ آرگنائزرز کے ذریعہ حجاج کے لئے شفافیت اور آسا نیاں پیدا کردی گئی ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

مکہ مکرمہ: ہندوستان پوری دنیا کا پہلا ملک بن گیا ہے جہاں حج 2020 صد فیصد ڈیجیٹل عمل سے گزر رہا ہے۔ یہ بات آج مکہ مکرمہ میں وزیر برائے اقلیتی امور مختار عباس عباس نقوی اور سعودی عرب کے وزیر حج و عمرہ ڈاکٹر محمد صالح بن طاہر بینتین نے ہندوستان سعودی عرب کے درمیان حج 2020 کے معاہدہ پر دستخط کے بعد کہی۔ مختار عباس نقوی نے کہا کہ آن لائن درخواست، ای ویزا، حج پورٹل، حج موبائل ایپ، ’ای- مسیحا‘ صحت کی سہولت، مکہ مدینہ میں قیام / قیام کی معلومات، ہندوستان میں "ای-سامان کی پری -ٹیگنگ" نظام میں ہندوستان سے مکہ مکرمہ و مدینہ منورہ جانے والے افراد کو شامل کیا گیا ہے۔

مختار عباس نقوی نے کہا کہ ایئر لائنز کے ذریعہ حجاج کرام کے سامان کی ڈیجیٹل پری ٹیگنگ کا بندوبست کیا گیا ہے تاکہ ہندوستان سے آنے والے حجاج کرام کو یہاں تک کہ مکہ۔ مدینہ میں کس عمارت اور کس کمرے میں رہنا ہے، ہوائی اڈے پر اترنے کے بعد کون سی بس میں آنا ہے، وغیرہ، ہر قسم کی معلو مات فراہم ہو سکے۔ اس کے علاوہ عازمین حج کے سِم (SIM)کارڈ کو حج موبائل ایپ سے منسلک کرنے کا انتظام کیا گیا ہے، تاکہ حجاج کرام کو مکہ مدینہ میں حج سے متعلق تازہ ترین معلومات فوری طور پر مل جائیں۔ اس سال، حج ہاؤس، ممبئی میں 100 ٹیلیفون لائن کے انفارمیشن سنٹر کا آغاز کیا گیا ہے تاکہ عازمین حج کو ہر طرح کی معلومات فراہم کی جاسکے اور حج کے پورے عمل کی تکمیل میں مدد مل سکے۔

مختار عباس نقوی نے کہا کہ جہاں ایک طرف ہندوستان کے تمام حاجیوں کو صحت کا کارڈ فراہم کرنے کا انتظام کیا گیا ہے، وہیں دوسری طرف، سعودی عرب میں ہندوستانی حاجیوں کے لئے "ای۔ مسیحا" کی سہولت فراہم کی گئی ہے، جس میں ہر حاجی کی صحت سے متعلق تمام معلومات آن لائن دستیاب ہوں گی تاکہ کسی بھی ہنگامی صورتحال میں کسی بھی عازم حج کو فوری طور پر طبی خدمات فراہم کی جاسکیں۔

مختار عباس نقوی نے کہا کہ حج گروپ آرگنائزرس کو بھی صد فیصد ڈیجیٹل کرکے پورٹل سے منسلک کیا گیا ہے، جس کی وجہ سے حج گروپ آرگنائزرز کے ذریعہ حجاج کے لئے شفافیت اور آسا نیاں پیدا کردی گئی ہیں۔ پہلی مرتبہ حاجیوں کی سہولت کے لئے حج گروپ آرگنائزرز کا ایک پورٹل بھی بنایا گیا تھا /pto/ haj.nic.in//: http (پورٹل برائے حج گروپ آرگنائزر)، جس میں تمام لائسنس یا فتہHGO پیکیجز کی تمام معلومات دی گئی ہیں۔

مختار عباس نقوی نے کہا کہ حکومت ہند، جدہ میں ہندوستانی قونصل خانہ، حکومت سعودی عرب اور دیگر متعلقہ ایجنسیاں حج 2020 کو کامیاب اور قابل رسائی بنانے کے لئے تعاون کر رہی ہیں۔ حج 2020 میں، 2 لاکھ ہندوستانی مسلمان بغیر کسی سبسڈی کے حج پر جائیں گے۔ انہوں نے بتایا کہ 28 نومبر تک ملک بھر سے موصولہ آن لائن درخوا ستوں میں جموں و کشمیر سے اب تک تقریبا 000 15، درخواستیں موصول ہوئیں۔ ہندوستان میں حج کی درخواست کی آخری تاریخ 05 دسمبر 2019 ہے۔

مختار عباس نقوی نے کہا کہ حکومت سعودی عرب نے ہمیشہ ہی ہندوستان کے حجاج کرام اور اُن کی حفاظت میں سرگرمی اور دلچسپی کا مظاہرہ کیا ہے، جو ہندوستان اور سعودی عرب کے مابین مضبوط تعلقات کا ایک حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہزمیجیسٹی شاہ سلمان بن عبد العزیز آل سعود اور ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی کی سربراہی میں دونوں ممالک کے تعلقات نے ایک عروج حاصل کیا ہے۔ ہندوستان سعودی عرب مضبوط تہذیبی، تاریخی، ثقافتی، معاشی اور سیاسی تعلقات کا پابند ہے۔ دونوں ممالک کے مابین سعودی عرب کے ولی عہد ہزمیجسٹی شہزادہ محمد بن سلمان کے ہندوستان اور ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی کے اکتوبر 2019 میں اور اس سے قبل کے سعودی عرب کے دورے سے دونوں ممالک کے تعلقات مضبوط ہوئے ہیں۔

مختار عباس نقوی نے حج 2019 کو کامیاب بنانے میں اہم رہنمائی فراہم کرنے پر دونوں مقدس مقامات حرمین شریفین کے سربراہ سعودی عرب کے محترم شاہ سلمان بن عبد العزیز آل سعود کا شکریہ ادا کیا۔