امریکہ کی پیرس معاہدے اور ڈبلیو ایچ او میں واپسی، گوٹریس نے خیرمقدم کیا

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے پیرس موسمیاتی معاہدے میں واپسی کے ساتھ ہی عالمی ادارہ صحت اور اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل میں شامل ہونے کے امریکی فیصلے پر اطمینان کا اظہار کیا ہے

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹریس/ یو این آئی
اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انتونیو گوٹریس/ یو این آئی
user

یو این آئی

اقوام متحدہ: اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل انٹونیو گوٹیرس نے پیرس موسمیاتی معاہدے میں واپسی کے ساتھ ہی عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) اور اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل میں شامل ہونے کے امریکی فیصلے پر اطمینان کا اظہار کیا ہے۔ گوٹیرس نے امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن کے ساتھ فون پربات چیت کے دوران امریکی فیصلے کا خیرمقدم کیا۔

اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کے ترجمان نے جمرات کو دیر شام ایک بیان میں کہا ہے کہ"سکریٹری جنرل نے کہا ہے کہ خاص طور پر کورونا وائرس کی وبا ، ماحولیاتی ایمرجنسی ، امن ، سیکورٹی اور بڑھتے ہوئے اہم عالمی چیلنجوں کے بارے میں امریکہ اور اقوام متحدہ کے درمیان اہم اور مستحکم شراکت داری کی تعریف کی ہے۔‘‘

سکریٹری جنرل نے پیرس معاہدے ، ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن اور اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل میں دوبارہ شامل ہونے کے لئے امریکہ کا خیرمقدم کیا۔ ''

امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے کہا کہ گوٹیرس اور بلنکن نے جمعرات کو فون کے ذریعے شام میں سیاسی عمل کے تئیں اپنے عزم کی تصدیق کرنے کے ساتھ ساتھ کورونا وبا سے لڑنے کے لئے مشترکہ کوششوں پر تبادلہ خیال کرنے کے لئے بات چیت کی ہے۔ انہوں نے اس دوران یمن کی موجودہ صورتحال پر بھی تبادلہ خیال کیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔