عراق میں کورونا وائرس سے پہلی موت، 70 سالہ مولوی ہار گئے زندگی کی جنگ

شمالی کردش علاقہ کے میڈیکل افسر کے ترجمان نے بتایا کہ اس وائرس کی وجہ سے آج (بدھ) ایک مولوی کی موت ہو گئی۔ موت سے پہلے مولوی کو شمال مشرقی شہر سلیمانیہ میں الگ تھلگ رکھا گیا تھا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

کورونا وائرس بہت تیزی کے ساتھ پوری دنیا میں پھیلتا ہوا نظر آ رہا ہے۔ چین میں روزانہ کئی اموات ہو رہی ہیں اور اب دوسرے ممالک سے بھی اموات کی خبروں کا سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔ عراق میں بھی کورونا وائرس سے پہلی موت کی خبریں سامنے آ رہی ہیں۔ میڈیا ذرائع سے موصول خبروں کے مطابق بدھ کے روز ایک 70 سالہ مولوی کی اس مہلک وائرس نے جان لے لی۔

عراق میں جاری ایک سرکاری بیان میں جانکاری دی گئی ہے کہ اب تک عراق میں کل 31 لوگ کورونا وائرس سے متاثر ہیں اور انھیں سخت نگرانی میں رکھا گیا ہے۔ شمالی کردش علاقہ کے میڈیکل افسر کے ترجمان نے بتایا کہ اس وائرس کی وجہ سے آج (بدھ) ایک مولوی کی موت ہو گئی۔ موت سے پہلے مولوی کو شمال مشرقی شہر سلیمانیہ میں الگ تھلگ رکھا گیا تھا۔

مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ مولوی نے ایران سے لوٹے کچھ عراقی لوگوں سے ملاقات کی تھی۔ چین اور جنوبی کوریا کے بعد ایران ایسا ملک ہے جہاں اس وائرس سے اب تک 77 لوگوں کی موت ہو چکی ہے جب کہ 2300 لوگوں سے زیادہ متاثر ہیں۔

قابل ذکر ہے کہ عراق دراصل ایران کے سب سے بڑے ایکسپورٹ بازاروں میں سے ایک ہے۔ ایرانی زائرین کے لیے عراق کافی اہمیت رکھتا ہے۔ ایران کے لوگ عراق کے نجف اور کربلا کے معروف شہروں کا دورہ کرتے ہیں۔ کورونا وائرس کا معاملہ سامنے آنے کے بعد عراق نے ایران سے ملحق اپنی سرحدوں کو سیل کر دیا ہے اور غیر ملکی شہریوں کی آمد و رفت پر پابندی بھی عائد کر دی ہے۔

next