کیا طالبان نے کسی شخص کو ہیلی کاپٹر پر لٹکا کر سزائے موت دی؟ دعویٰ اور حقیقت

اس ویڈیو کے حوالہ سے یہ دعویٰ کیا گیا کہ امریکی فوج کی واپسی کے بعد ایئرپورٹ کے اوپر ہیلی کاپٹر پر لٹکا کر ایک شخص کو امریکی فوج کو مدد کرنے کی سزا دی گئی ہے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

کابل: افغانستان کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر تیزی سے وائرل ہو رہی ہے، جس میں ایک شخص ہیلی کاپٹر پر لٹکا ہوا نظر آ رہا ہے۔ دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ طالبان کی جانب سے اس شخص کو سزا دی گئی ہے لیکن اب اس ویڈیو کی حقیقت کا انکشاف ہو چکا ہے۔ اس ویڈیو کے حوالہ سے یہ دعویٰ کیا گیا کہ امریکی فوج کی واپسی کے بعد ایئرپورٹ کے اوپر ہیلی کاپٹر پر لٹکا کر ایک شخص کو امریکی فوج کو مدد کرنے کی سزا دی گئی ہے۔

بین الاقوامی میڈیا میں کئے جا رہے اس دعوے کے برعکس افغانستان کے مقامی صحافیوں کی وائرل ویڈیو کی حقیقت ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ شخص کو ہیلی کاپٹر پر لٹکا کر سزا نہیں دی گئی ہے بلکہ وہ صرف پرچم کو درست کر رہا ہے۔ دراصل اس شخص کو 100 میٹر اونچے جھنڈے کو صحیح کرنے کا کام سونپا گیا تھا اور اسے وہ ہیلی کاپٹر پر لٹک کر انجام دے رہا تھا۔


اس کے علاوہ یہ ویڈیو کابل کی نہیں ہے بلکہ اس ویڈیو کو قندھار میں شوٹ کیا گیا ہے۔ جو شخص ہیلی کاپٹر پر رسی کے سہارے لٹکا ہوا ہے اسے امریکہ اور یو اے ای میں تربیت دی گئی ہے۔ یہ ایک طالبانی جنگجو ہے جو جھنڈا صحیح کرنے کی کوشش کر رہا ہے لیکن وہ اپنی کوشش میں کامیاب نہیں ہو پایا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔