کورونا وائرس: محض چار دنوں میں ایک لاکھ کیسز کا اضافہ

گبریسس نے کہا کہ پہلے کیس کے بعد ایک لاکھ لوگوں کے متاثر ہونے میں 67 دن، دوسرے ایک لاکھ تک 11 دن اور اب 4 دن میں ایک لاکھ افراد متاثر ہوچکے ہیں۔ اس سے پتہ چلتا ہے کہ یہ وائرس کس تیزی سے پھیل رہا ہے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: کورونا وائرس ’کووڈ -19‘ سے متاثر مریضوں کی تعداد لگاتار بڑھتی جا رہی ہے اور اس کے مصدقہ مریضوں کی تعداد اب تین لاکھ کے پار پہنچ چکی ہے جس میں دو لاکھ سے تین لاکھ کے اعداد و شمار تک پہنچنے میں محض چار دن کا وقت لگا۔

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر ٹیدروس گبریسس نے گزشتہ کو ایک ورچوول پریس کانفرنس میں بتایا کہ کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد اب تین لاکھ کے پار پہنچ چکی ہے۔ دنیا کے تقریباً ہر ملک میں یہ وبا پھیل چکی ہے۔ یہ کافی افسوسناک ہے۔

انہوں نے کہا کہ ”اس وبا کے پھیلنے کی رفتار بڑھ رہی ہے۔ پہلے کیس کے بعد ایک لاکھ لوگوں کے متاثر ہونے میں 67 دن کا عرصہ لگا۔ دوسرے ایک لاکھ معاملہ سامنے آنے میں 11 دن لگے اور اب صرف چار دن میں مزید ایک لاکھ افراد متاثر ہو چکے ہیں۔ اس سے پتہ چلتا ہے کہ یہ وائرس کس تیزی سے پھیل رہا ہے“۔

گبریسس نے کہا کہ ہم اعداد و شمار کے غلام نہیں ہیں، ہم خاموش کھڑے ہوکر دیکھ نہیں سکتے۔ ہم اس وبا کے رخ کو پلٹ سکتے ہیں۔ اعدادوشمار معنی رکھتے ہیں کیونکہ یہ صرف تعداد نہیں ہیں۔ یہ وہ لوگ ہیں جن کی زندگی اور ان کے خاندان میں بھونچال آ گیا ہے۔ لیکن سب سے زیادہ اس بات پر فرق پڑتا ہے کہ ہم کیا کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گھروں میں بند رہ کر اور جسمانی دوری بنا کر ہم وائرس انفیکشن کی رفتار کو کم کر سکتے ہیں، لیکن ان دفاعی اقدامات سے ہم اس کو ہرا نہیں سکتے۔ جیتنے کے لئے جارحانہ موقف اختیار کرنا ضروری ہے، ہر مشتبہ کی تشخیص اور ہر متاثرہ شخص کی دیکھ بھال اور اس کے قریبی رابطے میں آنے والوں کو قرنطینہ کرنا ضروری ہے۔