روس کی ثالثی کے بعد آرمینیا۔آذربائیجان لاشوں کے تبادلے پر تیار

روس کی ثالثی کے بعد آرمینیا اور آذربائیجان نگورنو۔کاراباخ علاقے میں تصادم کے دوران مارے گئے فوجیوں کی لاشوں کے تبادلہ کرنے کے لئے تیار ہو گئے ہیں

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

باکو: روس کی ثالثی کے بعد آرمینیا اور آذربائیجان نگورنو۔کاراباخ علاقے میں تصادم کے دوران مارے گئے فوجیوں کی لاشوں کے تبادلہ کرنے کے لئے تیار ہو گئے ہیں۔ آذربائیجان کے وزارت دفاع نے سنیچر کو یہ اطلاع دی۔

وزارت نے بتایا کہ ’’آذربائیجان کے نگورنو۔کاراباخ علاقے میں تعینات روسی امن فوج کی ثالثی اور شراکت داری کے ذریعہ سے شوشا شہر کے اردگرد میدان جنگ میں مارے گئے کئی فوجیوں کی لاشیں برآمد کئے گئے تھے۔‘‘


اس انسانی اقدامات کے طور پر آرمینیائی مسلح فورسوں کے مارے گئے فوجیوں کی لاشیں آرمینیائی فریق کے حوالے کردیئے گئے تھے۔ اس کے علاوہ شوشا شہر کے اردگرد تصادم کے دوران مارے گئے آذربائیجان کی فوج کے چھ فوجیوں کی لاشیں موصول ہوئے تھیں۔

وزارت نے بتایا کہ متنازعہ خطہ میں چھ ہفتوں کے تصادم کو ختم کرنے کے لئے منگل کو آرمینیا، آذربائیجان اور روس کے لیڈروں کے ذریعہ دستخط شدہ ایک مشترکہ اعلامیہ کے مطابق انسانی بنیاد پر یہ کارروائی ہوئی۔ امن معاہدے میں جنگ بندی، قیدیوں کا تبادلہ اور روسی امن فوجیوں کی تعیناتی پربھی رضامندی کا اظہار کیا گیا تھا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;