یمن میں اندوہناک آتشزدگی، 8 افراد ہلاک، 170 جھلسے

اتوار کو حوثی باغیوں کے ذریعہ چلائے جارہے غیر مقیم حراستی مرکز میں اچانک آگ لگ گئی۔ مرکز میں آگ لگنے کی وجہ کا ابھی پتہ نہیں چل سکا ہے۔

علامتی، تصویر آئی اے این ایس
علامتی، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

صنعاء: یمن کے دارالحکومت کے ایک غیر مقیم حراست سہولت مرکز میں آگ لگنے سے کم از کم آٹھ لوگوں کی موت ہوگئی اور 170 سے زیادہ افراد جھلس گئے۔ وسطی ایشیا اور شمالی افریقہ کے لئے منتقلی کےلئے بین الاقوامی تنظیم (او ای او ایم) کے علاقائی دفتر نے پیر کو یہ اطلاع دی۔ اتوار کو حوثی باغیوں کے ذریعہ چلائے جارہے اس مرکز میں اچانک سے آگ لگ گئی۔ مرکز میں آگ لگنے کی وجہ کا ابھی پتہ نہیں چل سکا ہے۔

آئی او ایم علاقائی دفتر نے اتوار کی دیر رات ٹوئٹ کیا، ’’صنعاء‎ میں غیر مقیم حراست سہولت مرکز میں آگ الگنے پر ہمیں پناہ گزینوں اور گارڈس کی موت پر گہرا دکھ ہوا۔ آگ میں آٹھ لوگوں کی موت ہوگئی حالانکہ ہلاک شدگان کی تعداد بڑھ سکتی ہے۔ متاثرین کے کنبے اور سبھی زخمیوں کے تئیں ہماری تعزیت ہے۔‘‘ تنظیم نے کہا کہ حادثے میں 170 سے زیادہ جھلسے لوگوں کو طبی راحت مہیا کی جا رہی ہے، جن میں سے 90 کی حالت نازک ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔