دہلی میں بچوں کو آج سے لگیں گے ٹیکے، 159 سرکاری مراکز تیار

تمام ویکسینیشن سائٹس پر ایمبولینسیں تعینات کی جائیں گی اور ہسپتالوں کو سرکاری ہسپتالوں کے ساتھ منسلک کر دیا گیا ہے تاکہ ویکسینیشن کے بعد ہونے والے منفی اثرات سے بچا جا سکے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

دہلی حکومت نے قومی راجدھانی میں 159 مراکز کو نامزد کیا ہے جہاں آج سے 15 سے 18 سال کی عمر کے بچوں کے لئے کووڈ19 کے خلاف خصوصی ویکسینیشن مہم شروع ہوگی ۔یواین آئی کو دی گئی فہرست کے مطابق ویکسینیشن سائٹس قومی راجدھانی کے تمام 11 اضلاع میں ہیں جہاں بچوں کی کووڈ ویکسینیشن آج سے شروع ہوگی۔ محکمہ صحت کے ایک سینئر افسر نے بتایا کہ ہندو راؤ، گردھاری لال، کستوربا سمیت تمام 159 مراکز، دہلی میونسپل کارپوریشن کے 60، نئی دہلی میونسپل کونسل اور کنٹونمنٹ بورڈ کے اسکولوں اور اسپتالوں میں اہل بچوں کے لیے خصوصی طور پر حفاظتی ٹیکے لگائے جائیں گے۔

انہوں نے بتایاکہ ’’ہمیں یقین ہے کہ بچوں کے لیے ویکسینیشن کے لیے آنے کے لیے کافی جگہ ہوگی۔ تاہم، اتر پردیش اور ہریانہ کے سیٹلائٹ شہروں جیسے نوئیڈا، غازی آباد اور گروگرام کے لوگ بھی یہاں ویکسینیشن کے لیے آتے ہیں۔ لہذا، ہم ضرورت پڑنے پر بچوں کے حفاظتی ٹیکوں کی مہم کو مزید مراکز تک پھیلائیں گے۔"


بچوں کی ویکسینیشن کی تیاریوں کے بارے میں انہوں نے بتایا کہ تمام ویکسینیشن سائٹس پر ایمبولینسیں تعینات کی جائیں گی اور ہسپتالوں کو سرکاری ہسپتالوں کے ساتھ منسلک کر دیا گیا ہے تاکہ ویکسینیشن کے بعد ہونے والے منفی اثرات سے بچا جا سکے۔

مذکورہ انتظامات کا حوالہ دیتے ہوئے عہدیداروں نے بتایا کہ ہم نے حفاظتی ٹیکوں کے بعد کی الرجی کے لیے ایڈورس ایونٹ آفٹر ایمونائزیشن (اے ای ایف آئی) کٹ تیار کی ہے جسے مراکز میں تقسیم کیا جائے گا۔ اس میں ویکسینیشن کے بعد الرجی کی تشخیص کے لیے ادویات اور انجیکشن شامل ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ "سنگین منفی واقعہ کے لیے ایک ایمبولینس کو تعینات کیا گیا ہے جو متاثرہ کو ویکسینیشن مراکز سے منسلک اسپتال لے جائے گی۔"


انہوں نے بتایا کہ اس تیاری کے ایک حصے کے طور پر محکمہ تعلیم نے اسکولوں کو ہدایت دی ہے کہ وہ والدین کو آگاہ کریں کہ وہ 15 سے 18 سال کی عمر کے بچوں کو جلد از جلد کورونا کے ٹیکے لگوائیں۔
محکمہ کی ہدایات، جو سرکاری اور نجی دونوں اسکولوں کو جاری کی گئی ہیں، میں بتایا گیا ہے کہ 15 سے 18 سال کی عمر کے تمام سرکاری، سرکاری امداد یافتہ اور پرائیویٹ غیر امدادی اسکول کے طلباء کے لیے ہنگامی بنیادوں پر ویکسین لگوانا لازمی ہے۔

رجسٹرار جنرل اور مردم شماری کمشنر کے مطابق 15 سے 18 سال کی عمر کے 10,14,000 بچے کووڈ ویکسینیشن کے اہل ہیں۔ کووڈ-19 کے خلاف ویکسینیشن کے لیے اس گروپ کی مہم کل سے شروع ہوگی۔


مرکز نے اعلان کیا ہے کہ بھارت بائیوٹیک کی کوویکسین واحد ویکسین ہے جو 15-18 سال کی عمر کے بچوں کو دی جائے گی۔

مرکزی حکومت نے بچوں کی کووِڈ ویکسینیشن کے رہنما خطوط میں بتایا ہے کہ ویکسینیشن کے لیے واک اِن اور آن لائن رجسٹریشن دونوں دستیاب ہوں گے، رجسٹریشن 03 جنوری کو ویکسینیشن کے دن سے شروع ہوگی۔ بچے اپنے والدین کے موجودہ کو۔ون اکاؤنٹس کا استعمال کرتے ہوئے یا موبائل نمبر کے ذریعے نیا اکاؤنٹ بنانے کے بعد بھی خود کو رجسٹر کر سکتے ہیں۔ اسکول اور سرکاری شناختی کارڈ کا استعمال کرتے ہوئے کو۔ون پورٹل پر ویکسینیشن سلاٹ بک کیے جا سکتے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔