فلم ’نیا دور‘ ہی بی آر چوپڑا کی زندگی میں کامیابی کا دور لائی

سال 1985 میں انہوں نے ناظرین کی نبض کو پہچانا اور چھوٹے پردے کا رخ بھی کیا۔ دوردرشن کی تاریخ میں اب تک کا سب سے کامیاب سیریل مہابھارت بنانے کا سہرا بھی انہی کو جاتا ہے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

بی آر چوپڑا کا نام بالی ووڈ میں ایک ایسے فلمساز کے طور پر یاد کیا جاتا ہے جنہوں نے خاندانی، سماجی اور صاف ستھری فلمیں بنا کر سنیما شائقین کے دلوں میں ایک خاص جگہ بنائی۔ 22 اپریل 1914 کو پنجاب کے شہر لدھیانہ میں پیدا ہونے والے بی آر چوپڑا عرف بلدیو رائے چوپڑا بچپن سے ہی فلموں میں کام کرکے شہرت کی بلندیوں پر پہنچنا چاہتے تھے۔ بی آر چوپڑا نے لاہور کے مشہور گورنمنٹ کالج میں انگریزی ادب میں پوسٹ گریجویشن مکمل کیا۔انہوں نے اپنے کیریئر کا آغاز بطور فلمی صحافی کیا۔ وہ فلم میگزین سنڈے ہیرالڈ میں فلموں کے جائزے لکھتے تھے۔ سال 1949 میں انہوں نے فلم کروٹ سے فلم پروڈکشن کے میدان میں قدم رکھا لیکن بدقسمتی سے یہ فلم باکس آفس پر بری طرح ناکام ہوئی۔

سال 1955 میں، بی آر چوپڑا نے بی آر فلمز بینر کا آغاز کیا۔ انہوں نے سب سے پہلے بی آر فلمز کے بینر تلے فلم نیا دور بنائی ۔ فلم نیا دور کے ذریعے بی آر چوپڑا نے دور جدید اور دیہی ثقافت کے درمیان تصادم کو سلور اسکرین پر پیش کیا جسے ناظرین نے خوب سراہا۔ فلم نیا دور نے کامیابی کے نئے ریکارڈ بنائے۔


بی آر چوپڑا کے بینر تلے بننے والی فلموں پر ایک نظر ڈالیں تو ان کی بنائی ہوئی فلمیں معاشرے کو ایک پیغام دینے والی تھیں۔وہ ہر بار اپنے ناظرین کو کچھ نیا دینا چاہتے تھے۔ اسی کے پیش نظر ہوئے 1960 میں انہوں نے قانون جیسی تجرباتی فلم بنائی۔ فلم انڈسٹری میں یہ ایک نیا تجربہ تھا جب فلم گانوں کے بغیر بھی بنائی گئی ۔

بی آر چوپڑا نے اپنے بھائی اور معروف پروڈیوسر ڈائریکٹر یش چوپڑا کو شہرت کی بلندیوں تک لے جانے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ دھول کا پھول، وقت اور اتفاق جیسی فلموں کی کامیابی کے بعد ہی یش چوپڑا فلم انڈسٹری میں بطور ڈائریکٹر قائم ہوئے۔ مشہور پلے بیک سنگر آشا بھوسلے کو کامیابی کے عروج پر پہنچانے میں پروڈیوسر ڈائریکٹر بی آر چوپڑا کی فلموں کا اہم کردار رہا ہے۔آشا بھوسلے کے علاوہ بی آر چوپڑا نے پلے بیک سنگر مہندر کپور کو ہندی فلم انڈسٹری میں قائم کرنے میں بھی اہم کردار ادا کیا۔


80کی دہائی میں خراب صحت کی وجہ سے بی آر چوپڑا نے فلم کی پروڈکشن کو روک دیا۔ سال 1985 میں انہوں نے ناظرین کی نبض کو پہچانا اور چھوٹے پردے کا رخ بھی کیا۔ دوردرشن کی تاریخ میں اب تک کا سب سے کامیاب سیریل مہابھارت بنانے کا سہرا بھی انہی کو جاتا ہے۔ تقریباً 96 فیصد سامعین تک پہنچنے کے ساتھ اس سیریل نے اپنا نام گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں بھی درج کرایا۔

اگر ہم بی آر چوپڑا کو ملنے والے اعزاز پر نظر ڈالیں تو 1998 میں انہیں ہندی سنیما کے سب سے بڑے اعزاز دادا صاحب پھالکے ایوارڈ سے نوازا گیا۔ اس کے علاوہ انہیں سال 1960 میں ریلیز ہونے والی فلم قانون کے لیے بہترین ہدایت کار کے فلم فیئر ایوارڈ سے نوازا گیا۔کثیرالجہت شخصیت کے مالک بی آر چوپڑا نے فلم پروڈکشن کے علاوہ باغبان اور بابل کی کہانی بھی لکھی۔ وہ 5 نومبر 2008 کو اس دنیا کو الوداع کہہ گئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔