اقراء انٹرنیشنل اسکول بنگلور ’برٹش کونسل انٹرنیشنل اسکول ایوارڈ‘ سے سرفراز

عائشہ نور نے بتایا کہ اقرا انٹرنیشنل اسکول، بنگلور نے عالمی معیار کے کلاس روم، عالمی معیار کے طریقہ تدریس اوراسمارٹ کلاس کے اعتراف میں سال 2019-22 کے لئے برٹش کونسل انٹرنیشنل اسکول ایوارڈ ملا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی/ بنگلور: بنگلور کے دینی وعصری تعلیم کا سنگم اقرا انٹرنیشنل اسکول کو عالمی معیار کے کلاس روم، بہترین سہولت، اچھے طریقہ تعلیم، تعلیم میں اختراعات اور ’نصاب میں بین الاقوامی جہت کے فروغ میں نمایاں خدمات کے لئے برٹش کونسل انٹرنیشنل اسکول ایوارڈ (آئی ایس اے) سے نوازا گیا ہے۔ یہ ایوارڈ چنئی کے تاج کورو منڈل ہوٹل میں منعقدہ تقریب میں برٹش کونسل کی طرف سے دیا گیا۔

اقرا انٹرنیشنل اسکول، بنگلور کی بانی منیجنگ ڈائرکٹر عائشہ نور نے جاری ایک ریلیز میں بتایا کہ اقرا انٹرنیشنل اسکول، بنگلور نے عالمی معیار کے کلاس روم، عالمی معیار کے طریقہ تدریس اوراسمارٹ کلاس کے اعتراف میں سال 2019-22 کے لئے برٹش کونسل انٹرنیشنل اسکول ایوارڈ (آئی ایس اے) ملا ہے۔ اس کے علاوہ اقراء انٹرنیشنل اسکول کے تعلیمی ویڈیو کو ملک کے کئی اسکولوں کے ویڈیوز میں منتخب کیا گیا ہے۔ اسی کے ساتھ اس اسکول کو ملک کے اسلامک اسکولوں میں باوقار قومی اسکول قرار دیا گیا ہے۔

تعلیمی میدان میں کام کرنے کا حوصلہ ملا ہے:  نور عائشہ
تعلیمی میدان میں کام کرنے کا حوصلہ ملا ہے: نور عائشہ

قبل ازیں اسکول کی نمایاں کارکردگی کی وجہ سے متعدد قومی ایوارڈ مل چکے ہیں۔ یہ ایوارڈ بینچ مارکنگ اسکیم ہے جس میں اسکولوں کو اپنے نصاب میں بین الاقوامی جہت شامل کرکے اور کلاس روم کی بات چیت اورتبادلہ خیالات، اختراعات کرنے، تدریسی طریقوں میں ایک نمایاں سطح حاصل کرنا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس ایوارڈ سے ہمیں مزید تعلیمی میدان میں کام کرنے کا حوصلہ ملے گا اور اپنے اسکول کے معیار اور تعلیمی اختراعات کو مزید بلند کریں گے۔

خیال رہے کہ آئی ایس اے اسکولوں کو ایک ایکشن پلان تیار کرنے اور بین الاقوامی سرگرمیوں کو عملی جامہ پہنانے کے لئے ایک فریم ورک مہیا کرتا ہے، اور اسکولوں کو آئی سی ٹی کے استعمال، تخلیقی تعلیمی طریقوں اور سیکھنے کے حقیقی تناظر کے ذریعہ طلباء کے تعلیم و تعلم کا بھر پور تجربہ فراہم کرتا ہے۔اسی کے ساتھ آئی ایس اے ایک قائدانہ چیلنج ہے اور ٹیم کی تشکیل، جدت اور پروجیکٹ مینجمنٹ کو فروغ دیتا ہے۔

بزنس گریجویٹ عائشہ نور نے بتایا کہ اقراء انٹرنیشنل اسکول نے اپنے طلبا کو بین الاقوامی اور عالمی پلیٹ فارم مہیا کرنے کے لئے برٹش کونسل میں اندراج کیا تھا۔ انٹرنیشنل اسکول ایوارڈ کا حصول اسی سمت میں ایک اہم قدم ہے۔ انہوں نے بتایا کہ اس ایوارڈ کے لئے، سال بھر، طلباء اور اساتذہ تعلیمی عمل میں بین الاقوامی جہتوں کو ملحوظ نظر رکھتے ہوئے متعدد منصوبوں اور سرگرمیوں میں شریک ہوئے تھے۔ جس سے طلباء کو بہت فائدہ ہو اور ان سرگرمیوں نے انہیں عالمی ثقافتی اور تقابلی بصیرت روشناس کرایا تھا۔

عائشہ نور نے کہا کہ یہ ایوارڈ ان طلباء اور اساتذہ کی محنت سے ممکن ہوا ہے جو جبوتی، افغانستان، بنگلہ دیش، پاکستان، برطانیہ، امریکہ، آسٹریلیا، جاپان، فرانس، چین، سری لنکا جیسے ممالک کے ساتھ سائنس، تاریخ وغیرہ کے ذریعہ مختلف باہمی تعاون کی سرگرمیوں میں شریک ہوئے تھے۔ بانی مینیجنگ ڈائریکٹر نے عملے کو مبارکباد اور شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اسکول اساتذہ شمیمہ پروین، انیقہ خان، تحیتہ ملا، مہناز روزہ احمد، لمینہ ایم کے، ممتاز بیگم، نغمہ اور فاطمہ جبیں کا خصوصی تعاون کے لئے شکر گزار ہیں۔

واضح رہے کہ اس اسکول کی ایک نویں کلاس کی طالبہ ام ہانی ٹی کا ’ایرو اسپیس گرلز ان اسٹیم مینٹرشپ پروگرام‘ میں انتخاب ہوا ہے اور گریڈ آٹھ کے دو طالب علم عزیزم حافظ محمد عمر اور عزیزم حافظ محمد عقیل نے عصری علوم کے IGCSE Syllabus کے ساتھ ساتھ حفظ قرآن کریم مکمل کیا تھا۔ عائشہ مسلم بچے اور بچیوں کو کس طرح جدید طریقے سے دینی اور عصری تعلیم کا سنگم بنایا جائے اس پر مسلسل کوشاں رہتی ہیں۔ نور عائشہ اور اقرا انٹرنیشنل اسکول کو نمایاں تعلیمی کارکردگی کی وجہ سے اب تک متعدد ایوارڈ مل چکے ہیں۔