گزشتہ برس سے پانچ فیصد زیادہ طلبا پاس، طالبات نے ہمیشہ کی طرح بازی ماری

اس برس پاس ہونے کی شرح 88.78 فیصد رہی جو گزشتہ برس کی مقابلہ 5.38 فیصد زیادہ ہیں۔اس برس گزشتہ برس کے مقابلے کم طلبا امتحان میں بیٹھے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سنٹرل بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن (سی بی ایس ای) کی 12 ویں جماعت کی طالبات نے ایک بار پھر بازی ماری ہے اور اس بار پانچ فیصد زیادہ طلبا بھی پاس ہوئے۔

سی بی ایس ای کی جانب سے پیر کے روز نتائج میں تریویندرم علاقہ 97.7 فیصد کے ساتھ پہلے مقام پر رہا جبکہ پٹنہ 74.57 فیصد کے ساتھ سب سے نچلے مقام پر رہا ہے۔ اس برس 92.15 فیصد طالبات اور 86.19 فیصد طلبا پاس ہوئے ہیں جبکہ 67.67 فیصد مخنث طلبا کامیاب ہوئے۔

ملک کے اسکولوں میں جواہر نوودیہ ودیالیہ 98.7 فئصد نتیجوں کے ساتھ سبھی اسکولوں میںسب سے آگے رہا جبکہ سنٹرل اسکول آرگنائزیشن 98.2 نتائج کےساتھ دوسرے مقام پر ہے۔ سینٹرل تبت اسکول کے نتیجے 98.23 فیصد رہے۔ سرکاری اسکول کے نتائج 94.94 فیصد اور سرکاری امداد یافتہ اسکول 91.56 فیصد نتیجے رہے ۔

سی بی ایس ای کی ریلیز کے مطابق اس برس 13109 اسکولوں کے 1192961 طلبا نے امتحانات دیئے جن میں سے 1059080 طلبا پاس ہوئے اور اس طرح اس برس پاس ہونے کی شرح 88.78 فیصد رہی جو گزشتہ برس کی مقابلہ 5.38 فیصد زیادہ ہیں۔اس برس گزشتہ برس کے مقابلے کم طلبا امتحان میں بیٹھے۔

ریلیز کے مطابق اس برس بنگلور 90.05 فیصد نتائج کے ساتھ دوسرے جبکہ چنئی 96.17 ، مغربی دلی 94.61، مشرقی دلی 92.24، پنچکولہ 92.52، چنڈی گڑھ 92.04، بھونیشور 91.46، بھوپال 90.5، پونے 90.24، اجمیر 87.60، نوئیڈا 84.87۔ گوہاٹی 83.37، دہرہ دون 83.22، پریاگ راج 82.49 فیصد مقام پر رہا۔

اس برس 95 فیصد سے زیادہ نمبر حاصل کرنے والے طلبا کی تعداد 30686 ہے جبکہ 90 فیصد سے زیادہ نمبر حاصل کرنے والوں کی تعداد 157934 ہے۔

next