سی بی ایس ایس 12ویں جماعت کے امتحانات منسوخ، اب نتائج کس بنیاد پر جاری ہوں گے؟

کورونا کے دور میں امتحانات کرانا جہاں کئی طلبا اور والدین کی فکر کا باعث تھا وہیں اب امتحانات کی منسوخی نے بھی متعدد طلبا کو پریشان کر دیا، جانیں کیوں؟

علامتی تصویر / Getty Images
علامتی تصویر / Getty Images
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: مرکزی حکومت نے منگل کے روز سی بی ایس ای بورڈ کے امتحانات کو منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور اس کے بعد مختلف ریاستوں کے تعلیمی بورڈ بھی اس سمت میں فیصلہ لینے والے ہیں۔ سی بی ایس ای کے علاوہ آئی سی ایس ای نے بھی اپنے بورڈ امتحانات کو منسوخ کر دیا ہے۔ اب امید ظاہر کی جا رہی ہے کہ کئی ریاستوں کے تعلیمی بورڈ بھی ایسا ہی اقدام اٹھا سکتے ہیں اور بچوں کو اسسمنٹ کی بنیاد پر نمبرات فراہم کر دئے جائیں گے۔

کورونا کے دور میں امتحانات کرانا جہاں کئی طلبا اور والدین کی فکر کا باعث تھا وہیں اب امتحانات کی منسوخی نے بھی متعدد طلبا کو پریشان کر دیا ہے۔ دراصل، ابھی تک تو بچے یہ سوچ کر بھی پریشان تھے کہ کہیں اچانک امتحانات کرانے جانے کا فیصلہ نہ لے لیا جائے، تاہم یہ خدشہ اب دور ہو چکا ہے اور حکومت نے اعلان کیا ہے کہ اب امتحان نہیں لئے جائیں گے۔ بچوں کے ذہن میں یہ سوال گردش کر رہا ہے کہ امتحانات منسوخ ہونے کے بعد انہیں نمبردات کس فارمولہ کے تحت دئے جائیں گے۔


تاحال سی بی ایس ای نے حتمی طور پر کوئی فارمولہ تیار نہیں کیا ہے جبکہ حکومت نے یہ فیصلہ بورڈ پر چھوڑ دیا ہے۔ خیال کیا جا رہا ہے کہ 11ویں اور 12ویں کے انٹرنل اسسمنٹ کی بنیاد پر ان کے فائنل نمبرات طے ہوں گے۔

امتحانات منسوخ ہونے کے بعد بھی کوئی اسٹوڈنٹ اگر امتحان دینے کا خواہاں ہے تو اس کے لئے آپشن دیا جائے گا۔ تاہم جب کورونا کے حالات سازگار ہوں گے تبھی امتحانات لینے کا انتظام کیا جائے گا۔ امتحانات میں جب بچوں کو نمبر حاصل ہو جائیں گے اور وہ اس سے مطمئن نہیں ہوں گے تو وہ تحریری امتحان کے لئے درخواست پیش کر سکتے ہیں۔ اس کے لئے کیا اصول ہوں گے اس حوالہ سے بورڈ جلد ہی جاری کر دےگا۔


بارہویں کے بعد بچوں کی سب سے بڑی پریشانی گریجوایشن میں داخلہ کی ہوتی ہے۔ بچوں کو اب یہ فکر ہے کہ انہیں کالج میں کس طرح داخلہ ملے گا اور کہیں ان کا سال بےکار تو نہیں چلا جائے گا۔ حکومت نے اب امتحانات منسوخ کرنے کا فیصلہ لیا ہے تو نتائج جولائی کے اواخر تک جاری کئے جائیں گے اور اگر اگست تک تنائج آتے ہیں تو اسی بنیاد پر بچوں کو کالج میں داخلہ کے لئے اپلائی کرنا ہوگا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔