بالی وُڈ اور ڈرگ مافیا: دیپیکا پاڈوکون سمیت تین اداکاراؤں سے تفتیش

انسداد منشیات کے بھارتی محکمے کے حکام نے بالی وُڈ سپر سٹار دیپیکا پاڈوکون اور دو دیگر اداکاراؤں سے پوچھ گچھ کی ہے۔ تفتیش فلمی شخصیات کے منشیات کا کاروبار کرنے والوں سے مبینہ روابط کا حصہ ہے۔

بالی وُڈ اور ڈرگ مافیا: دیپیکا پڈوکون سمیت تین اداکاراؤں سے تفتیش
بالی وُڈ اور ڈرگ مافیا: دیپیکا پڈوکون سمیت تین اداکاراؤں سے تفتیش
user

ڈی. ڈبلیو

بھارت سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق حکام نے بتایا کہ دیپیکا پاڈوکون سمیت بالی وُڈ کی فلم انڈسٹری سے تعلق رکھنے والی تین شخصیات سے آج کل کی گئی یہ پوچھ گچھ ملک کی اینٹی نارکوٹکس ایجنسی کی ان کوششوں کا حصہ تھی کہ آیا اس صنعت کی معروف شخصیات منشیات کا کاروبار کرنے والے جرائم پیشہ گروہوں کے ساتھ رابطوں میں ہیں۔

بھارتی ریاست مہاراشٹر کے دارالحکومت ممبئی میں نارکوٹکس کنٹرول بورڈ کے دفتر میں پوچھ گچھ کے لیے کل سب سے پہلے دیپیکا پاڈوکون وہاں پہنچیں۔ انہیں اس پیشی کا حکم اسی ہفتے دیا گیا تھا، جب وہ مغربی بھارت کے ساحلی تعطیلاتی مقام گوآ میں ایک فلم کی شوٹنگ میں مصروف تھیں۔

شردھا کپور اور سارہ علی خان سے بھی پوچھ گچھ

بھارتی نیوز چینلز پر لائیو دکھائی جانے والی فوٹیج کے مطابق دیپیکا پاڈوکون کے بعد دو دیگر اداکارائیں بھی اسی نوعیت کی پوچھ گچھ کے لیے نارکوٹکس کنٹرول بورڈ کے دفتر گئیں۔ یہ دونوں اداکارائیں شردھا کپور اور سارہ علی خان تھیں۔

انسداد منشیات کے محکمے نے اس تفتیش کی فوری طور پر کوئی تفصیلات جاری نہیں کیں۔ تاہم ایک بیان میں بس اتنا کہا گیا کہ نارکوٹکس کنٹرول بورڈ نے نوجوان بھارتی اداکارسشانت سنگھ راجپوت کی موت کے بعد بالی وُڈ کی فلمی صنعت میں منشیات سے متعلق تفتیش شروع کر دی ہے۔

سشانت سنگھ راجپوت جون کے مہینے میں ممبئی میں اپنی رہائش گاہ پر مردہ پائے گئے تھے۔ انہوں نے بظاہر خود کشی کی تھی لیکن ان کی موت اور اس میں منشیات کے مبینہ عمل دخل کی تحقیقات ابھی جاری ہیں۔

اب تک درجن بھر فلمی شخصیات سے تفتیش

دیپیکا پاڈوکون دنیا کی سب سے بڑی فلمی صنعتوں میں شمار ہونے والے بالی وُڈ کی ان ایک درجن سے زائد شخصیات میں شامل ہیں، جن سے بھارتی نارکوٹکس کنٹرول بورڈ گزشتہ دو ہفتوں کے دوران پوچھ گچھ کر چکا ہے۔ آج ہفتے کو دیپیکا پاڈوکون سے قبل کل جمعہ پچیس ستمبر کو پاڈوکون کی مینیجر کرشما پرکاش سے بھی حکام نے تفتیش کی تھی۔

قبل ازیں بھارت کے ایک بہت کامیاب فلم ساز کرن جوہر نے کل جمعے کے روز اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ یہ الزامات غلط اور بے بنیاد ہیں کہ ان کی طرف سے اپنی رہائش گاہ پر گزشتہ برس جولائی میں اہتمام کردہ ایک پارٹی میں منشیات استعمال کئے گئے تھے۔

انہوں نے یہ بات اپنے گھر پر ہونے والی ایک ایسی پرانی پارٹی کی ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر آ جانے کے بعد کہی، جس میں بہت سی انتہائی مشہور فلمی شخصیات شریک ہوئی تھیں۔

next