کیا افغانستان آج پاکستان کے خلاف ہارنے کا سلسلہ توڑ پائے گا؟

آج کا میچ بھی چیپک میں کھیلا جا رہا ہے اور یہ پچ اسپن فرینڈلی ہے، یہاں ہمیشہ اسپنرز کا غلبہ ہوتا ہے ۔ افغانستان کے پاس شاندار اسپنر زہیں۔

<div class="paragraphs"><p>فائل تصویر آئی اے این ایس&nbsp;</p></div>

فائل تصویر آئی اے این ایس

user

قومی آوازبیورو

ون ڈے کرکٹ میں افغانستان کی پاکستان کے خلاف جیت اتنی قریب کبھی نہیں لگ رہی تھی جتنی آج ۔ شاید یہ اس عالمی  کپ میں پاکستان ٹیم کی شکست اور پھر افغانستان کی انگلینڈ کے خلاف جیت کی وجہ سے نظر آ رہا ہے۔ ایسے میں یہ قیاس کیا جا رہا ہے کہ آج افغان ٹیم پاکستان کے خلاف ون ڈے کرکٹ میں اپنی پہلی جیت درج کر سکتی ہے۔

پاکستان اور افغانستان کے درمیان اب تک 7 ون ڈے میچز ہو چکے ہیں۔ پاکستان نے یہ تمام میچ جیتے ہیں۔ کئی بار ایسا ہوا ہے جب افغانستان کی ٹیم جیتتے ہوئے ہاری ہے۔ ورلڈ کپ کے پہلے ون ڈے میچ میں پاکستانی ٹیم کسی نہ کسی طرح صرف ایک گیند باقی رہ کر ایک وکٹ سے جیتنے میں کامیاب رہی۔


افغانستان کا اسپن اٹیک اس کی سب سے بڑی طاقت ہے۔ اس ٹیم میں راشد خان، مجیب الرحمان اور محمد نبی جیسے آل راؤنڈ اسپنر ہیں۔ افغانوں کا یہ اسپن اٹیک عالمی معیار کا ہے۔ ٹیم انڈیا کے بعد اسے سب سے خوفناک اسپن حملہ کہا جا سکتا ہے۔ پھر آج کا میچ بھی چیپک میں کھیلا جا رہا ہے۔ جس پچ پر یہ میچ کھیلا جانا ہے وہ اسپن فرینڈلی ہے۔ یہاں ہمیشہ اسپنرز کا غلبہ ہوتا ہے۔ ایسے میں آج چیپک پچ اور افغانی اسپن اٹیک پاکستان کے لیے بڑا خطرہ ثابت ہو سکتے ہیں۔

افغانستان کی مضبوطی پاکستانی ٹیم کی سب سے بڑی کمزوری ہے۔ پاکستان کے پاس اچھے اسپن اٹیک کی کمی ہے۔ شاداب سے لے کر نواز اور افتخار تک باقاعدگی سے وکٹیں نہیں لے پا رہے ہیں۔ لیگ اسپنر اسامہ میر بھی اب تک کوئی اثر نہیں دکھا سکے۔


پاکستانی ٹیم کے پاس شاہین آفریدی اور حارث رؤف کی صورت میں دو انتہائی خطرناک بولرز موجود ہیں۔ یہ دونوں میچ وننگ گیند باز ہیں۔ دوسری جانب افغانستان کے پاس بھی نوین الحق اور فضل الحق فاروقی کی صورت میں دو بہترین بولرز موجود ہیں۔ یقیناً یہ دونوں آفریدی اور رؤف سے تھوڑا پیچھے ہیں لیکن اب تک ورلڈ کپ 2023 میں ان کی کارکردگی قابل تعریف رہی ہے۔

پاکستان کی بیٹنگ افغانستان سے زیادہ مضبوط ہے۔ امام الحق نے گزشتہ میچ میں پاکستان کی جانب سے اچھی اننگز کھیلی تھی۔ پاکستان کی جانب سے عبداللہ شفیق، محمد رضوان، سعود شکیل اور افتخار مسلسل اچھی بیٹنگ کر رہے ہیں۔ بابر اعظم سے کچھ مایوسی ضرور ہے لیکن وہ کسی بھی وقت بڑی اننگز کھیل سکتے ہیں۔


دوسری جانب افغان بلے بازوں کی کارکردگی میں بے ضابطگیاں سامنے آئی ہیں۔ گرباز اور زدران سے لے کر رحمت شاہ اور حشمت اللہ تک تمام بلے باز اس ورلڈ کپ میں رنز بنا رہے ہیں لیکن بعض اوقات وہ بہت جلد پویلین لوٹ جاتے ہیں۔ ویسے افغان ٹیم کی آٹھویں آرڈر تک اچھی بیٹنگ ہے۔ عمرزئی اور علی خیل اچھا کھیل رہے ہیں اور نبی اور راشد کی دھماکہ خیز بیٹنگ سے سب واقف ہیں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


/* */