سڈنی میں میچ کے دوران سراج کے ساتھ پھر بد تمیزی ، ناظرین کو اسٹیڈئم سے کیا باہر

آسٹریلیا میں ہندوستانی ٹیم کو میچ کھیلنا مشکل ہوتا جا رہا ہے ، پہلے کل اسٹیڈئم میں موجود ناظرین نے سراج اور بمراہ کے خلاف بدتمیزی کی اور آ ج سراج کےساتھ دوبارہ بدتمیزی کی۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

سڈنی میں کھیلے جا رہے تیسرے ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن آج ایک مرتبہ پھر اسٹیڈئم میں موجود ناظرین نے بد تمیزی کی اور یہ اس میچ میں دوسری مرتبہ ہوا ہے ۔ محمد سراج ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے تیز گیند باز ہیں اور وہ آج جب باؤنڈری پر فیلڈنگ کر رہے تھے اس وقت اسٹیڈئم میں ان کے پیچھے موجود کچھ ناظرین نے ان کے خلاف نسل پرستانہ بیان دئے اور بتایا جا رہا ہے کہ انہوں نےگالی گلوچ بھی کی۔

واضح رہے سراج نے جب امپائر سے اس کی شکایت کی تو انہوں نے ا س معاملہ کی اطلاع حفاظتی اہلکار کو دی اور میچ پندرہ منٹ تک رکا رہا ۔ حفاظتی اہلکار موقع پر گئے اور ان ناظرین کو اسٹیڈئم سے نکلنے کے لئے کہا ۔ واضح رہے یہ پورا ایک گروپ تھا جو پیچھے سے سراج پر نسل پرستانہ بیان دے کر ان کو ذہنی طور پر پریشان کر رہا تھا۔

ہندوستانی کرکٹ انتظامیہ ناظرین کے اس رویہ سے بہت سخت ناراض ہے اور ٹیم کے کوچ روی شاستری نے سلامتی کے ذمہ داران افسران سے تفصیل سے بات چیت کی اور ٹیم کے کپتان نے بھی امپائروں سے اس کی شکایت کی۔

حفاظتی اہلکار نے اس گروپ کو اسٹیڈئم سے باہر نکال دیا جس کے بعد میچ دوبارہ شروع کیا گیا ۔ یہ واقعہ 85 ویں اوور میں پیش آیا اور بتایا جا رہا ہے کہ یہ ناظرین شراب کے نشہ میں تھے ۔ کل جسپریت بمراہ اور سراج کے خلاف ایسی ہی بدتمیزیکی تھی۔آسٹریلیا میں یہ چلن بہت پرانا ہے اور یہ میزبان ٹیموں پر دباؤ بنانے کا ایک طریقہ ہے۔ ہندوستانی ناظرین میں ان واقعات کو لے کر بے چینی بڑ ھ رہی ہےاور وہ چاہتے ہیں ہندوستانی ٹیم دورہ بیچ میں چھوڑ کر واپس آ جائے۔

قومی آواز اب ٹیلیگرام پر پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next