کورونا وائرس کی وجہ سے آئی پی ایل رد ہو سکتا ہے؟

زندگی کے تمام شعبہ کورونا وائرس کی وجہ سے متاثر ہیں اور اب اس کا اثر کرکٹ کے آئی پی ایل مقابلہ پر بھی پڑنے کے آثار نظر آ رہے ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

29 مارچ سے شروع ہونے والا کرکٹ کا آئی پی ایل مقابلہ کورونا وائرس کی وجہ سے رد ہو سکتا ہے۔ ذرائع کے مطابق کورونا وائرس کی وجہ سے انڈین پریمیر لیگ (آئی پی ایل) رد ہو سکتا ہے۔ واضح رہے آئی پی ایل کا پہلا میچ ممبئی انڈینس اور چینئی سپر کنگس کے بیچ ہونے والا ہے۔ کورونا وائرس کی وجہ سے دنیا کے کئی حصوں میں کھیلوں کے مقابلہ رد ہو چکے ہیں۔

اے بی پی میں شائع خبر کے مطابق بی سی سی آئی کے مطابق آئی پی ایل کا پہلا مقابلہ 29 مارچ کو ہونا ہے اور محکمہ موسمیات کے مطابق اس وقت ملک میں درج حرارت 25 ڈگری تک ہو گا جس میں کورونا وائرس کے پھیلنے کے امکانات کم ہو جاتے ہیں۔ اس لئے ابھی یہ یقین سے تو نہیں کہا جا سکتا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے ہونے والا آئی پی ایل رد ہو سکتا ہے، لیکن اگر اس کے پھیلنے کی خبریں زیادہ پھیل گئیں تو پھر آئی پی ایل رد ہو سکتا ہے۔

آئی پی ایل کی تاریخوں کو آگے بڑھانے کے تعلق سے کہا گیا ہے کہ اس مقابلہ کی تاریخوں کو آگے بڑھانا بہت مشکل ہے کیونکہ کرکٹ کے انٹرنیشنل کیلنڈر کو روک کر ہی آئی پی ایل کی تاریخوں کو طے کیا جاتا ہے۔ اس لئے اس کی تاریخوں کو آگے پیچھے کرنے کا سوال ہی نہیں پیدا ہوتا، بس اتنا ہو سکتا ہے کہ حالات بگڑنے پر اس کو رد کیا جا سکتا ہے۔

دوسری جانب مہاراشٹر کے وزیر صحت راجیش ٹوپے نے مانگ کی ہے کہ آئی پی ایل میچ کے دوران آنے والی بھیڑ کی وجہ سے کورونا وائرس تیزی سے پھیل سکتا ہے اس لئے آئی پی ایل کی تاریخوں کو آگے بڑھا دینا چاہیے۔