ہندوستان نے دوسرے ٹیسٹ میں انگلینڈ کو 106 رنوں سے دی شکست، بمراہ پلیئر آف دی میچ، سیریز 1-1 سے برابر

انگلینڈ سے دوسرا ٹیسٹ جیت کر ہندوستان نے 1-1 سے برابری کر لی ہے، 9 وکٹ لینے والے جسپریت بمراہ کو پلیئر آف دی میچ کا ایوارڈ ملا ہے، لیکن ڈبل سنچری میکر جیسوال کو بھی فراموش نہیں کیا جا سکتا۔

<div class="paragraphs"><p>انگلینڈ کا آخری وکٹ لینے کے بعد جشن مناتے ہوئے جسپریت بمراہ، تصویر @BCCI</p></div>

انگلینڈ کا آخری وکٹ لینے کے بعد جشن مناتے ہوئے جسپریت بمراہ، تصویر @BCCI

user

قومی آوازبیورو

ہندوستان نے پہلے ٹیسٹ میچ میں انگلینڈ سے ملی شکست کا بدلہ آج وشاکھاٹنم میں لے کر سیریز کو 1-1 سے برابر کر دیا ہے۔ 5 ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا دوسرا ٹیسٹ ہندوستان نے 106 رنوں سے جیت لیا ہے۔ اس جیت کے ہیرو پلیئر آف دی میچ جسپریت بمراہ رہے جنھوں نے دونوں اننگ میں مجموعی طور پر 9 کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ حالانکہ ڈبل سنچری میکر یشسوی جیسوال کو بھی فراموش نہیں کیا جا سکتا جنھوں نے پہلی اننگ میں شاندار 209 رن بنائے تھے، اور اسی سے ہندوستان کو انگلینڈ پر بڑی سبقت بنانے کا راستہ ہموار ہوا تھا۔

آج وشاکھاپٹنم ٹیسٹ کا چوتھا دن تھا اور نیوزی لینڈ نے ایک وکٹ کے نقصان پر 67 رن سے آگے کھیلنا شروع کیا۔ شروعات ٹھیک ٹھاک ملی تھی کیونکہ نائٹ واچ مین ریحان احمد (23 رن) نے زیک کراؤلی کے ساتھ 45 رنوں کی شراکت داری کی، اور پھر کراؤلی نے اولی پوپ (23 رن) کے ساتھ 37 رنوں کی شراکت داری کی۔ لیکن ہر تھوڑے وقفہ پر وکٹ گرتے رہے جس نے انگلینڈ کو مشکل حالات میں ڈال دیا۔ جو روٹ میدان میں اترتے کے ساتھ ہی جارحانہ رنگ میں دکھائی دیے، اور نتیجہ یہ ہوا کہ 10 گیندوں میں ایک چھکا اور 2 چوکے کی مدد سے 16 رن بنا کر بڑا شاٹ کھیلنے کی کوشش میں آسان کیچ دے بیٹھے۔ انھیں روی چندرن اشون نے اکشر پٹیل کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کرایا۔ اس وقت انگلینڈ کا اسکور 4 وکٹ کے نقصان پر 154 رن ہو گیا تھا، یعنی ٹیم کو جیت کے لیے اب بھی 244 رنوں کی ضرورت تھی۔


یہاں پر کراؤلی اور جانی بیرسٹو سے اچھی شراکت داری کی امید تھی، لیکن کلدیپ یادو کی ایک بہترین گیند پر کراؤلی ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہو گئے۔ امپائر نے ناٹ آؤٹ دیا تھا جس پر روہت شرما نے ڈی آر ایس لے لیا اور گیند وکٹ پر لگتی ہوئی دکھائی دی۔ کراؤلی نے 73 رنوں کی شاندار اننگ کھیلی اور بیرسٹو کے ساتھ 40 رنوں کی شراکت داری کی۔ پھر اس کے بعد ٹیم کو پویلین لوٹنے میں بہت زیادہ وقت نہیں لگا۔ بیرسٹو بھی جلد ہی 26 رن بنا کر بمراہ کا شکار ہو گئے۔ کپتان بین اسٹوکس بدقسمت رہے جو 11 رن بنا کر شریئس ایر کی ایک بہترین تھرو پر رَن آؤٹ ہو گئے۔ بین فوکس (36 رن) اور ٹام ہارٹلی (36 رن) نے کچھ حد تک مزاحمت ضرور کی، لیکن دونوں کو ہی بمراہ نے پویلین کا راستہ دکھا دیا۔ شعیب بشیر بغیر کوئی رن بنائے مکیش کمار کا شکار ہوئے۔ جیمس اینڈرسن 5 رن بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔ اس طرح پوری انگلش ٹیم 69.2 اوورس میں 292 رنوں پر سمٹ گئی اور ہندوستانی ٹیم کو 106 رنوں سے جیت حاصل ہو گئی۔

ہندوستان کی طرف سے پہلی اننگ میں 6 وکٹ لینے والے جسپریت بمراہ نے دوسری اننگ میں بھی اپنا جلوہ برقرار رکھا۔ انھوں نے 17.2 اوورس میں ہی 46 رن دے کر 3 وکٹ حاصل کر لیے۔ 3 وکٹ روی چندرن اشون کو بھی ملے جنھوں نے 18 اوورس میں 72 رن خرچ کیے۔ مکیش کمار (5 اوورس میں 26 رن)، کلدیپ یادو (15 اوورس میں 60 رن) اور اکشر پٹیل (14 اوورس میں 75 رن) کو ایک ایک وکٹ حاصل ہوئے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;