آسٹریلیا پانچویں بار بنا چمپئن، ہندوستان کا عالمی چمپئن بننے کا خواب چکناچور

آسٹریلیا نے ایلیسا اور بیت مونی کو اننگز کے آغاز میں ملے جیون دان کا پورا فائدہ اٹھاتے ہوئے 20 اوور میں چار وکٹ پر 184 رن کا مضبوط اسکور بنایا اور ہندوستانی ٹیم کو 19.1 اوور میں 99 رن پر سمیٹ دیا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

میلبورن: ہندوستان کو آسٹریلیا کے دونوں اوپنروں کو آغاز میں جیون دان دینے کی بھاری قیمت چکانی پڑی اور اتوار کو میلبورن کرکٹ میدان میں اس کا آئی سی سی خواتین ٹی -20 ورلڈ کپ کا چمپئن بننے کا خواب چکنا چور ہو گیا۔

آسٹریلیا نے ہندوستان کو 85 رنز سے شکست دے کر پانچویں بار عالمی خطاب جیت لیا۔ آسٹریلیا نے اپنے دونوں اوپنروں ایلیسا هیلی (75) اور بیت مونی (ناٹ آؤٹ 78) کو اننگز کے آغاز میں ملے جیون دان کا پورا فائدہ اٹھاتے ہوئے 20 اوور میں چار وکٹ پر 184 رن کا مضبوط اسکور بنایا اور ہندوستانی ٹیم کو 19.1 اوور میں 99 رن پر سمیٹ دیا۔

ہندوستانی ٹیم پہلی بار عالمی کپ کے فائنل میں کھیل رہی تھی اور اس کا پہلی بار عالمی چمپئن بننے کا خواب ٹوٹ گیا۔ آسٹریلیا نے پانچویں بار عالمی اعزاز اپنے نام کیا۔ اس نے 2020 سے پہلے 2010، 2012، 2014 اور 2018 میں بھی یہ خطاب جیتا تھا۔

آسٹریلیا نے سات ٹی -20 ورلڈ کپ میں پانچ بار خطاب اپنے نام کیا ہے۔ آسٹریلوی اوپنر هیلی کو پہلے اوور کی پانچویں گیند پر شیفالی ورما نے جیون دان دیا۔ اس وقت بولر دپتی شرما تھیں۔ مونی کو چوتھے اوور کی تیسری گیند پر گیند باز راجیشوری گایكواڈ نے خود ہی جیون دان دیا۔ دونوں اوپنروں نے اس کا بھرپور فائدہ اٹھایا اور میچ فاتح نصف سنچری بنائیں۔ دونوں نے پہلے وکٹ کے لئے 115 رن کی ساجھیداری کی۔ هیلی نے 39 گیندوں میں سات چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سے 75 رن بنائے جبکہ مونی نے 54 گیندوں میں 10 چوکوں کے سہارے ناٹ آؤٹ 78 رن بنائے۔

بڑے ہدف کا تعاقب کرتے وقت ہندوستان کی امیدیں پہلے اوور میں ہی ختم ہو گئیں جب اس کے دھماکہ خیز بلے باز 16 سال کی شیفالی ورما دو رن بنا کر آؤٹ ہو گئیں۔ تانیہ بھاٹیہ دو رن بنا کر ریٹائرڈ ہرٹ ہوئیں، سمرتی مندھانا 11 رن بنا کر آؤٹ ہوئیں جبکہ جیمما راڈرگیز کی کا اکاؤنٹ بھی نہیں کھلا۔ کپتان هرمن پریت کور کی خراب فارم فائنل میں بھی برقرار رہی اور وہ چار رن بنا کر آؤٹ ہو گئیں۔

پانچ وکٹ 58 رن پر گرنے کے بعد ہندوستان کے لئے واپسی کرنا مشکل ہو گیا اور پوری ٹیم 99 رنز پر ڈھیر ہو گئی۔ آسٹریلوی کھلاڑیوں نے پانچویں بار خطابی جیت کا جشن منایا جبکہ ہندوستانی کھلاڑی آنسوؤں کے سمندر میں ڈوب گئیں۔ ہندوستان نے گروپ مرحلے کے اپنے پہلے مقابلے میں آسٹریلیا کو 17 رنز سے شکست دی تھی اور ٹورنامنٹ میں اس نے مسلسل شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کیا تھا لیکن فائنل کی شکست ہندوستانی ٹیم کو طویل عرصے تک كچوکتی رہے گی۔