ماہ رمضان میں روزے رکھ کر فارم واپس پانے میں مدد ملی: ہاشم آملہ

جنوبی افریقہ کے مایہ ناز بلے باز ہاشم آملہ نے عالمی کپ کرکٹ سے قبل فارم میں واپسی کا کریڈٹ ماہ رمضان کے روزوں کو دیا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

برسٹل: جنوبی افریقی کرکٹ ٹیم کے اوپننگ بلے باز ہاشم آملہ نے رمضان المبارک میں ورلڈ کپ کے آغاز پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ روزہ رکھنے سے ذہنی اور روحانی ورزش ہوجاتی ہے۔ آئی سی سی کی ویب سائٹ کے لئے دیئے گئے ایک انٹرویو میں ہاشم آملہ نے کہا کہ روزہ رکھنے سے انہیں اصلاح میں مدد ملتی ہے اور وہ ہمیشہ سے روزے رکھتے رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ماہ رمضان میں روزے ہمیشہ ہی مجھے جسمانی اور ذہنی مضبوطی فراہم کرتے ہیں، میں ہمیشہ ہی ان کا منتظر رہتا ہوں اور یہ سال کا بہترین مہینہ ہے۔

ہاشم آملہ کی گزشتہ کچھ عرصے سے پرفارمنس اچھی نہیں رہی، ورلڈ کپ اسکواڈ میں شمولیت پر بھی کافی سوچ بچار ہوئی تھی، دونوں وارم اپ میچز میں آملہ نے ففٹی پلس اسکور کیے۔

انہوں نے کہا کہ رمضان المبارک سال کا سب سے اچھا مہینہ ہے اور انہیں لگتا ہے کہ اس سے اچھی ذہنی اور روحانی ورزش ہو جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ رن بنانا ہمیشہ اہم ہوتا ہے، وہ ورلڈ کپ کی فائنل الیون میں رہیں یا نہ رہیں وہ جو کرسکتے ہیں وہ کرتے ہیں اور اس کے بعد جو ہوتا ہے وہ ٹیم کی بھلائی کے لئے ہوتا ہے۔

جنوبی افریقہ کی ٹیم ورلڈ کپ کے 2 وارم اپ میچز کھیل چکی ہے جس میں ہاشم آملہ نے نصف سنچریاں اسکور کی ہیں۔ خیال رہے کہ 2012 میں جنوبی افریقہ کی ٹیم نے رمضان المبارک میں انگلینڈ کا دورہ کیا تھا اور ہاشم آملہ نے روزے رکھ کر نہ صرف میچز میں حصہ لیا تھا بلکہ جنوبی افریقہ کے لئے سب سے زیادہ ٹیسٹ رنز بنانے کا ریکارڈ بھی اپنے نام کیا تھا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔