احسان مانی آئی سی سی کمیٹی کے سربراہ مقرر

پی سی بی نے اپنے بیان میں اس کی اطلاع دی ہے۔ پی سی بی نے کہا، “ا یف اینڈ سی اے آئی سی سی کی سب سے بااثر کمیٹی ہے جس کی ذمہ داری مالی اور تجارتی معاملوں میں تعاون کرنا ہوتا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

دبئی: پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین احسان مانی کو 17 سال بعد ایک بار پھر آئی سی سی فنانشل اینڈ کمرشل افیئرز کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔

گذشتہ ہفتے آئی سی سی کے سالانہ اجلاس میں احسان کی تقرری کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ پی سی بی نے اپنے بیان میں اس کی اطلاع دی ہے۔ پی سی بی نے کہا، "ا یف اینڈ سی اے آئی سی سی کی سب سے بااثر کمیٹی ہے جس کی ذمہ داری مالی اور تجارتی معاملوں میں تعاون کرنا ہوتا ہے۔

پیشے سے اکاؤنٹنٹ احسان مانی 17 سال بعد واپس اس عہدے پر مقرر کیے گئے ہیں۔ وہ آئی سی سی کی ایف اینڈ سی اے کمیٹی کے پہلے صدر بھی ہیں جنہیں اس عہدے پر 1996 میں مقرر کیا گیا تھا اور 2002 تک اس عہدے پر رہے تھے۔

احسان مانی کی سربراہی میں قائم کردہ کمیٹی میں اندرا نوئی بطور آزاد ڈائریکٹر شرکت کریں گی جبکہ امیتابھ چوہدری (بی سی سی آئی)، کرس نینزنی (کرکٹ ساؤتھ افریقہ) عمران خواجہ (نائب چیئرمین آئی سی سی)، ایرل ایڈنگز (کرکٹ آسٹریلیا) اور کولن گریوز (انگلینڈ کرکٹ بورڈ) بھی کمیٹی میں شامل ہیں۔ آئی سی سی کے چیئرمین ششانک منوہر اور آئی سی سی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر مانو اس کمیٹی کے بربنائے عہدہ رکن ہیں۔

پی سی بی چیئرمین نے اپنی تقرری پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا، "میں آئی سی سی چیئرمین کا شکر گزار ہوں جنہوں نے اس عہدے کے لیے مجھ پر اعتماد ظاہر کیا ہے۔ میں منو ساہنی اور ان کی ٹیم کے ساتھ کام کرنے کے سلسلے میں کافی پرجوش ہوں۔ "منی کو آئی سی سی کی آڈٹ کمیٹی میں بھی شامل کیا گیا ہے جس کے صدر ہندوستان کے یوراج نارائن ہیں۔

next