کرکٹ: آئرلینڈ نے سبھی کو حیرت میں ڈالا، جنوبی افریقہ کو شکست دے کر تاریخ رقم کی

آئرلینڈ نے مقررہ 50 اوورز میں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 290 رنز بنائے تھے، اور جواب میں جنوبی افریقہ کی پوری ٹیم 48.3 اوورز میں 247 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

تصویر آئی اے این ایس
تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

ڈبلن: ٹیم کے سبھی کھلاڑیوں کے شاندار کھیل کی بدولت آئرلینڈ نے یہاں منگل کو دوسرے ون ڈے میچ میں جنوبی افریقہ کو 43 رن سے شکست دے کر تاریخ رقم کی۔ اس سے قبل آئرلینڈ نے جنوبی افریقہ کے خلاف پانچ ون ڈے میچ کھیلے ہیں اور سب ہار چکے ہیں۔ ایسی صورتحال میں آئرلینڈ نے یہ میچ جیت کر تاریخ رقم کی ہے۔ جنوبی افریقہ کےخلاف ٹاس ہارنے کے بعد بیٹنگ کا فیصلہ کرتے ہوئے آئرلینڈ نے مقررہ 50 اوورز میں پانچ وکٹوں کے نقصان پر 290 رنز کا مشکل اسکور بنایا۔ جواب میں جنوبی افریقہ 48.3 اوورز میں 247 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔

اوپنر پال اسٹرلنگ اور کپتان اینڈی بلبیرنی نے آئر لینڈ کو عمدہ آغاز فراہم کیا۔ دونوں نے پہلے وکٹ کے لئے 64 رنز کی شراکت کی۔ اسٹرلنگ کے 27 رنز پر آؤٹ کرنے کے بعد کپتان بلبیرنی نے اینڈی میک برائن کے ساتھ اننگز جاری رکھی اور دوسری وکٹ کے لئے 60 رنز کا اضافہ کیا، لیکن میک برائن بھی 124 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے اور پویلین لوٹ گئے۔


اس کے بعد 194 کے اسکور پر کپتان کی وکٹ گر گئی۔ بلبیرنی نے 117 گیندوں میں 10 چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 102 رن کی شاندار سنچری کھیلی۔ پھر آخر میں ہیری ٹیکٹر اور جارج ڈاکریل نے دھماکہ خیز انداز میں کھیل کر ٹیم کو 290 کے اسکور تک پہنچایا۔ دونوں کے مابین چوتھی وکٹ کے لئے 90 رنز کی ایک اہم شراکت قائم ہوئی۔ جب ٹیکٹر نے 68 گیندوں میں چھ چوکوں اور چار چھکوں کی مدد سے 79 رنز بنائے تو ڈوکریل نے 23 گیندوں پر پانچ چوکوں اور دو چھکوں کی مدد سے 45 رنز بنائے۔

جنوبی افریقہ کی طرف سے اینڈیل پہلوکیو نے دو جبکہ کاگوسو ربادا، کیشیو مہاراج اور تبریز شمسی نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔ اسی دوران جانمان ملان نے سب سے زیادہ 84 اور رئیسی وین ڈیر وان ڈیر ڈوسن نے 49 رنز بنائے۔ آئرلینڈ کی بیٹنگ کے ساتھ ساتھ بولنگ بھی اچھی رہی۔ ان کے تمام بولرز نے وکٹیں حاصل کیں۔ مارک اڈیئر، جوشوا لٹل اور اینڈی میک برائن نے دو دو، جبکہ کریگ ینگ، سمی سنگھ اور جارج ڈوکریل نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔ اینڈی بلبیرنی، جنہوں نے 102 رنز کی عمدہ سنچری کھیلی، کو 'پلیئر آف دی میچ' قرار دیا گیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔