بنگلہ دیش کے لیے مشکلیں بڑھیں، ہندوستان دورے سے باہر ہو سکتے ہیں شکیب

بی سی بی کے صدر نظم الحسن نے ایک بنگالی اخبار کو دیئے انٹرویو میں اشارہ دیئے ہیں کہ شکیب ہندستان دورے سے باہر رہ سکتے ہیں۔ اس دورے کے لیے بدھ تک بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم ہندستان پہنچے گی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

ڈھاکہ: بنگلہ دیشی کرکٹرز کی تنخواہ ادائیگی کو لے کر ہڑتال کی قیادت کرنے والے ملک کے نمبر ایک آل راؤنڈر شکیب الحسن گزشتہ کچھ دنوں سے بنگلہ دیش کرکٹ بورڈ (بی سی بی) کے نشانے پر ہیں اور اب آثار ہیں کہ وہ اگلے ماہ سے شروع ہونے والے ہندستان دورے سے بھی باہر رہ سکتے ہیں۔

بی سی بی نے کھلاڑیوں کی تنخواہ ادائیگی سے متعلق مطالبات کو قبول کر لیا تھا جس کے بعد بنگلہ دیش کا ہندستان دورہ طے وقت پر مقرر کیا گیا ہے، لیکن ٹیم کے سینئر کھلاڑیوں اور بورڈ کے درمیان فی الحال تعلقات سدھرتے دکھائی نہیں دے رہے ہیں۔ حال ہی میں بی سی بی نے ضابطہ سے متعلق قوانین کی خلاف ورزی کرنے کے معاملے میں شکیب کے خلاف قانونی کارروائی کرنے کا اعلان کیا تھا۔

اسی درمیان بی سی بی کے صدر نظم الحسن نے ایک بنگالی اخبار کو دیئے انٹرویو میں اشارہ دیئے ہیں کہ شکیب ہندستان دورے سے باہر رہ سکتے ہیں۔ اس دورے کے لیے بدھ تک بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم ہندستان پہنچے گی۔ محمد سیف الدین چوٹ کی وجہ سے جبکہ تمیم اقبال اپنی حاملہ بیوی کی وجہ سے پہلے ہی اس دورے سے باہر ہو چکے ہیں۔

شکیب نے گزشتہ تین دنوں سے قومی ٹیم کے ٹریننگ سیشن میں بھی حصہ نہیں لیا ہے۔ بی سی بی نے اگرچہ اس بارے میں کوئی بیان نہیں دیا ہے لیکن کوچ رسل ڈومنگو نے کہا ہے کہ شکیب پریکٹس میچ سے اس لئے باہر ہیں کیونکہ وہ دوسرے کھلاڑیوں پر توجہ دینا چاہتے ہیں۔

حسن نے کہاکہ مجھے یقین ہے کہ بہت سے کھلاڑی اس دورے پر نہیں جائیں گے اور ہمیں اس کے بارے میں اس وقت بتایا جائے گا جب ہمارے پاس اور كوئی اختیار نہیں بچا ہو گا ۔ میں نہیں جانتا لیکن میں نے شکیب کو فون کیا تھا ۔ دیکھتے ہیں کہ کیا ہوتا ہے ، لیکن مجھے جانکاری ملی ہے کہ کچھ کھلاڑیوں نے نہ جانے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ کئی صورتحال بدل گئی ہیں۔ اگر یہ سینئر کھلاڑی 30 اکتوبر کو بتائیں گے کہ ہم نہیں جائیں گے تو ہم کیا کریں گے۔ ہمیں تو ساری ٹیم بدلنی پڑ جائے گی۔ میں کپتان کہاں سے لاؤں گا۔