مالیا بھگوڑا اقتصادی مجرم قرار، اب ضبط ہوسکے گی جائداد

عدالت کے اس فیصلے کے بعد مالیا کا نام مفرور اقتصادی مجرم ایکٹ (ایف آئی او اے ) کے تحت پہلے مفرور اقتصادی مجرم کے طور پر درج ہوگیا ہے۔

یو این آئی

ممبئی: بینکوں کے ہزاروں کروڑ روپے کے غبن کے ملزم وجے مالیا کو ہفتہ کو اس وقت زبردست جھٹکا لگا جب ممبئی کی اینٹی منی لانڈرنگ قانون (پی ایم ایل) کی خصوصی عدالت نے اسے بھگوڑا ’اقتصادی مجرم ‘ قرار دیا۔

عدالت کے اس فیصلے کے بعد بینکوں کے 9 ہزار کروڑ روپے کے مقروض مالیا کی اب املاک ضبط کی جا سکیں گی۔ ای ڈی نے خصوصی عدالت کے سامنے مالیہ کو بھگوڑا اقتصادی مجرم قرار دینے کی درخواست دائر کی تھی۔

وجے مالیا نے اس فیصلے کو 26 دسمبر 2018 کو 5 جنوری 2019 تک کے لئے محفوظ رکھا تھا۔ مالیا نے پی ایم ایل اے کورٹ میں دلیل دی تھی کہ وہ بھگوڑا مجرم نہیں ہے اور نہ ہی منی لانڈرنگ کے جرم میں شامل ہے۔

اس سے قبل وجے مالیا نے دسمبر مہینے میں گزارش کی تھی کہ اسے اقتصادی بھگوڑا مجرم قرار دینے کے لئے ای ڈی کی جانب سے شروع کئے گئے عمل پر روک لگائی جائے۔ کورٹ نے مالیا کی اس عرضی کو خارج کر دیا تھا۔

عدالت کے تازہ فیصلے کے بعد مالیا کا نام مفرور اقتصادی مجرم ایکٹ (ایف آئی او اے ) کے تحت پہلے مفرور اقتصادی مجرم کے طور پر درج ہوگیا ہے۔ مالیا کے خلاف اب نئے اقتصادی جرائم قانون کے تحت کارروائی کی جائے گی۔

مالیا مارچ 2016 میں برطانیہ بھاگ گیا تھا۔ مالیا پر بینکوں کے 9 ہزار کروڑ روپے کے قرض کا الزام ہے اور وہ ہندوستان میں مطلوب ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال 10 دسمبر کو لندن کی ویسٹ منسٹر کی عدالت نے مالیا کی حوالگی پر ہندوستان کے حق میں فیصلہ دیا تھا اور اسے ہندوستان بھیجنے کی اجازت دے دی تھی۔