روزگار نہیں اہلیت کی کمی! بے روزگاروں کے زخموں پر مودی کے وزیر کی نمک پاشی

مرکزی وزیر سنتوش گنگوار نے اپنی حکومت کی حصولیابیوں کو شمار کراتے ہوئے کہا کہ ملک میں معاشی کسادبازاری جیسی صورت حال نہیں ہے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

مرکزی وزیر سنتوش گنگوار نے اپنی حکومت کی حصولیابیوں کو شمار کراتے ہوئے کہا کہ ملک میں معاشی کسادبازاری جیسی صورت حال نہیں ہے۔ گنگوار نے کہا کہ ان کی حکومت نے معیشت کو مضبوط کرنے کے لئے کافی اقدامات کئے ہیں۔

ملک میں جاری معاشی کساد بازاری کے سبب گزشتہ کچھ مہینوں میں لاکھوں نوجوان اپنے روزگار سے ہاتھ دھو چکے ہیں۔ وہیں، مرکزی وزیر برائے محنت اور روزگار سنتوش گنگوار نے بیروزگار نوجوانوں کے زخمیوں پر ایک طرح سے نمک پاشی کی ہے۔

انہوں نے کہا، ’’ملک میں ملازمتوں کی کمی نہیں ہے، ہمارے شمالی ہندوستان میں اہل لوگوں کی کمی ہے۔ یہاں ملازمت کے لئے بھرتی کرنے والے افسران بتاتے ہیں کہ جس عہدے کے لئے لوگ چاہییں ان میں اہلیت ہی نہیں ہے!‘‘

مودی کے وزیر سنتوش گنگوار اپنی حکومت کے 100 دن مکمل ہونے پر میڈیا سے بات کر رہے تھے، اسی اثنا میں انہوں نے یہ بیان دیا۔ گنگوار نے یہیں بس نہیں کیا اور اپنی حکومت کی حصولیابیوں کو شمار کراتے ہوئے کہا کہ ملک میں مندی جیسی کوئی صورت حال نہیں ہے۔ گنگوار نے کہا کہ ان کی حکومت نے معیشت کو مضبوط کرنے کے لئے کئی اقدامات اٹھائے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ عوامی شعبہ کے بینکوں کا انضمام بھی ان اقدامات میں شامل ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ مودی حکومت نے گزشتہ پانچ سالوں میں اپنے کام سے عوام میں حکومت کے تئیں یقین بحال کیا ہے۔

مرکزی وزیر سنتوش گنگوار نے یہ بیان ایسے وقت میں دیا ہے جب ملک میں معاشی کساد بازاری اپنے عروج پر ہے اور اس کی وجہ سے آٹو سیکٹر کی نامور کمپنیاں تخلیق کاری بند کرنے پر مجبور ہیں۔ اب تک لاکھوں نوجوانوں کی ملازمت ختم ہو چکی ہیں اور مودی کے وزیر نوجوانوں کو نا اہل قرار دے رہے ہیں۔

Published: 15 Sep 2019, 2:10 PM