روپے کی قدر میں گراوٹ جاری، ڈالر کے مقابلے روپیہ پہلی بار 78.40 کی سطح پر پہنچا

بیرون ملکی سرمایہ کاروں کے ذریعہ عالمی عدم استحکام کے سبب اپنے سرمایہ کو واپس نکالنے کے سبب ڈالر کے مقابلے روپیہ اب تک کی اپنی تاریخی ذیلی سطح 78.40 روپے تک گر گیا ہے۔

روپیہ اور ڈالر، تصویر آئی اے این ایس
روپیہ اور ڈالر، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

ڈالر کے مقابلے روپیہ کی قدر میں گراوٹ کا دور جاری ہے۔ بدھ کے روز اس میں تاریخی گراوٹ دیکھنے کو ملی۔ سرمایہ کاروں کے ذریعہ زبردست بکوالی کے سبب ایک ڈالر کے مقابلے روپیہ پہلی بار 27 پیسے کی گراوٹ کے ساتھ 78.40 روپے کی ذیلی سطح پر پہنچ گیا۔ کرنسی بازار کے بند ہونے پر روپیہ ایک ڈالر کے مقابلے 78.38 روپے پر بند ہوا۔

انٹر بینک کرنسی ایکسچینج مارکیٹ میں روپیہ ڈالر کے مقابلے 78.13 پر کھلا، لیکن دوپہر بعد سرمایہ کاروں کی زبردست بکوالی کے سبب 78.40 روپے تک نیچے چلا گیا۔ خام تیل کی قیمتوں میں بین الاقوامی بازار میں کمزوری نہیں آتی تو روپیہ میں مزید بڑی گراوٹ آ سکتی تھی۔ غیر ملکی سرمایہ کاروں کی بکوالی کے سبب ہندوستانی شیئر بازار میں سنسیکس 709 تو نفٹی 225 پوائنٹ کی گراوٹ کے ساتھ بند ہوا ہے۔


واضح رہے کہ روس اور یوکرین کے درمیان جنگ ہونے کے بعد سے روپیہ لگاتار ڈالر کے مقابلے کمزور ہوتا جا رہا ہے۔ بیرون ملکی سرمایہ کاروں کے ذریعہ عالمی عدم استحکام کے سبب اپنے سرمایہ کو واپس نکالنے کے سبب ڈالر کے مقابلے روپیہ اب تک کی اپنی تاریخی ذیلی سطح 78.40 روپے تک گر گیا ہے۔ قابل ذکر ہے کہ 23 فروری 2022 کو جنگ شروع ہونے سے پہلے روپیہ ڈالر کے مقابلے 74.62 روپے پر تھا جو گر کر 22 جون 2022 کو 78.40 روپے پر آ چکا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔