وزیر اعظم مودی کی تقریر میں خلل پر راہل گاندھی کا طنز ’ٹیلی پرامپٹر بھی جھوٹ برداشت نہیں کر سکا!‘

داووس ایجنڈا سمٹ کے دوران وزیر اعظم نریندر مودی کی تقریر میں کچھ خلل پڑا، اس پر راہل گاندھی سمیت دیگر کانگریس لیڈروں نے طنز کیا ہے

پی ایم مودی، تصویر آئی اے این ایس
پی ایم مودی، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے پیر کے روز ورلڈ اکنامک فورم کے داووس ایجنڈا سمٹ میں شرکت کی۔ اس چوٹی کانفرنس میں پی ایم مودی کے خطاب کا کلپ شیئر کرتے ہوئے کانگریس نے ان پر طنز کیا ہے۔ اس کے علاوہ راہل گاندھی نے وزیر اعظم مودی کو نشانہ بنایا ہے۔

کورونا کے دور میں وزیر اعظم مودی نے داووس ایجنڈا سمٹ میں ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے شرکت کی تھی۔ جس کلپ کو شیئر کیا جا رہا ہے اس میں وہ اپنے خطاب کے دوران بولنا بند کر دیتے ہیں۔ اس پر کانگریس پارٹی اور راہل گاندھی نے نشانہ لگایا ہے۔ الزام ہے کہ ٹیلی پرامپٹر کے رکنے کی وجہ سے وزیر اعظم مودی نے اپنی تقریر روک دی۔


دوسری طرف بی جے پی لیڈروں کی طرف سے جواب دیا گیا ہے۔ دہلی بی جے پی کے ترجمان تیجندر پال سنگھ بگا نے کہا ہے کہ ورلڈ اکنامک فورم کی طرف سے تکنیکی خرابی آئی تھی، جس کی وجہ سے وزیر اعظم مودی نے تقریر روک دی۔

کچھ ایسی ویڈیوز بھی منظر عام پر آئی ہیں، جن میں دکھایا گیا ہے کہ خرابی ٹیلی پرامپٹر میں نہیں تھی، بلکہ منیجنگ ٹیم نے وزیر اعظم کو رکنے اور پوچھنے کو کہا تھا کہ سب ان کی آواز سن پا رہے ہیں یا نہیں۔

وزیر اعظم نریندر مودی نے ورلڈ اکنامک فورم کے داووس ایجنڈا سمٹ میں سرمایہ کاروں کو راغب کرنے کی کوشش کی۔ انہوں نے اپنے دور حکومت میں ملک میں ہونے والی 10 بڑی تبدیلیوں کو شمار کیا اور کہا کہ اب مشکل وقت ختم ہو گیا ہے۔ اقتصادی اصلاحات پر زور دیتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان جو لائسنس راج کے لیے بدنام تھا اب ترقی کر چکا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔