آف لائن ڈیجیٹل ادائیگی کے نظام سے گاؤں بنیں گے کیش لیس، آر بی آئی کا اعلان

سنٹرل بینک نے کہا ہے کہ آف لائن موڈ میں ڈیجیٹل ادائیگی کا نظام صارفین کے مفادات اور ان کی رقم کی حفاظت کا بھی پورا خیال رکھا جائے گا۔ ٹیسٹ پروجیکٹ کے لئے رہنما اصول جلد ہی جاری کر دیئے جائیں گے۔

آر بی آئی گورنر شکتی کانت داس / یو این آئی
آر بی آئی گورنر شکتی کانت داس / یو این آئی
user

یو این آئی

ممبئی: دیہی علاقوں میں کنکٹی وٹی کی پریشانی کے پیش نظر ریزرو بینک آف انڈیا (آر بی آئی) نے آج آف لائن ڈیجیٹل ادائیگی کا نظام متعارف کرانے کا اعلان کیا۔ ریزرو بینک انڈیا کے گورنر شکتی کانت داس نے مانیٹری پالیسی کمیٹی کی میٹنگ کے بعد آر بی آئی کے گورنر شکتی کانتا داس نے کہا کہ آف لائن موڈ میں کارڈ اور موبائل ڈیوائس کے ذریعہ خوردہ ڈیجیٹل ادائیگی کی اسکیم جلد ہی شروع کی جائے گی۔ تجربے کے طور پر پہلے چھوٹی رقم کی ادائیگی کے لئے ایسا نظام متعارف کرایا جائے گا۔ اگر تجربہ کامیاب رہا تو اس کا دائرہ وسیع کیا جائے گا۔

ترقیاتی اور ریگولیٹری پالیسیوں سے متعلق آر بی آئی کے بیان میں کہا گیا ہے کہ ’’موبائل فونز، کارڈز، ڈیجیٹل والیٹ وغیرہ کے ذریعے ڈیجیٹل ادائیگیوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے، لیکن دور دراز علاقوں میں اسے اپنانے میں انٹرنیٹ کنکٹی وٹی کی دقت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ لہذا کارڈ، موبائل ڈیوائسز اور والیٹ کے ذریعے آف لائن ادائیگی کے آپشن پر ڈیجیٹل ادائیگیوں کو مزید فروغ دینے پر غور کیا جارہا ہے۔

سنٹرل بینک نے کہا ہے کہ آف لائن موڈ میں ڈیجیٹل ادائیگی کا نظام صارفین کے مفادات اور ان کی رقم کی حفاظت کا بھی پورا خیال رکھا جائے گا۔ ٹیسٹ پروجیکٹ کے لئے رہنما اصول جلد ہی جاری کر دیئے جائیں گے۔ ٹیسٹ کامیاب ہونے کے بعد آر بی آئی بڑے پیمانے پر اس پر عمل درآمد سے قبل تفصیلی ہدایات جاری کرے گا۔

Published: 6 Aug 2020, 2:48 PM
next