نیرو مودی بھگوڑا، مالی مجرم قرار

پنجاب نیشنل بینک (پی این بی) کے ساتھ اربوں روپے کا گھپلہ کرنے والے اور ملک سے مفرور ہیروں کے تاجر کو جمعرات کے روز ممبئی کی ایک خصوصی عدالت نے بھگوڑا اور مالی مجرم قرار دیا

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

ممبئی: پنجاب نیشنل بینک (پی این بی) کے ساتھ اربوں روپے کا گھپلہ کرنے والے اور ملک سے مفرور ہیروں کے تاجر کو جمعرات کے روز ممبئی کی ایک خصوصی عدالت نے بھگوڑا اور مالی مجرم قرار دیا۔ خصوصی عدالت نے یہ فیصلہ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی اپیل پر سنایا ہے۔ بھگوڑے شراب کے تاجر وجے مالیہ کے بعد نیرو مودی دوسرا تاجر ہے جسے گذشتہ سال ایف ای او قانون کے تحت مجرم قرار دیا گیا ہے۔

نیرو مودی پر پی این بی بینک کے ساتھ 14 ہزار روپیے کی دھوکہ دہی کرنے کا معاملہ ہے۔ انسداد منی لانڈرنگ قانون (پی ایم ایل اے)کی خصوصی عدالت کے جسٹس وی سی باردے نے ای ڈی اور نیرو مودی کے وکلاء کے درمیان چلنے والی طویل بحث کے بعد بیرون ملک مفرور ہیروں کے تاجر کو بھگوڑااور مالی مجرم قرار دیا۔ نیرو مودی کی جانب سے پہلے عدالت سے ای ڈی کے معاملے کو خار ج کرنے کی گزارش کی گئی تھی۔

پی این بی گھوٹالے میں نیرو مودی کے علاوہ اس کے ماما میہول چوکسی اہم ملزم ہیں۔ ملک کے بینکنگ سیکٹر کا سب سے بڑا گھپلہ گذشتہ برس جنوری میں روشنی میں آیا تھا۔ نیرو مودی کا مامامیہول چوکسی بھی ملک سے مفرور ہے۔ نیرو مودی کو اس برس مارچ میں لندن کے ہولبورن میں گرفتار کیا گیا تھا اور اسے ہندوستان لانے کے لیے حوالگی کا زیر التویٰ ہے۔ نیرو مودی کے مالی بھگوڑا مجرم قرارپا جانے کے بعداب اس کی جائداد کو ضبط کرنے کی کاروائی شروع ہوسکتی ہے۔

    next