کیمپا کولا کے لانچ ہوتے ہی کوکا کولا نے گھٹائی قیمت

اہم بات یہ ہے کہ مشروبات کے زمرے میں کیمپا کولا ہندوستان کا اپنا برانڈ ہے اور اس کا نعرہ 'دی گریٹ انڈین ٹسٹ' پہلے بہت مشہور تھا۔

<div class="paragraphs"><p>علامتی تصویر</p></div>

علامتی تصویر

user

قومی آوازبیورو

ریلائنس انڈسٹریز کے چیئرمین اور دنیا کے امیر ترین اشخاص میں شامل مکیش امبانی اپنے کاروبار کو مسلسل بڑھا نے کی سمت میں قدم اٹھا رہے ہیں۔ انہوں نے گزشتہ سال کولا مارکیٹ میں داخل ہونے کے لیے ایک معاہدے پر دستخط کیے تھے اور ہولی کے فوراً بعد ریلائنس کی جانب سے 70 کی دہائی میں سب سے مشہور برانڈ کیمپا کولا کے تین ذائقے  متعارف کرانے کا اعلان کرتے ہوئے مارکیٹ میں زبردست دستک دی ہے ۔ اس کے بعد کولا مارکیٹ میں قیمتوں کی جنگ شروع ہو گئی ہے اور دیگر کمپنیوں نے اپنی مصنوعات کی قیمتیں کم کرنا شروع کر دی ہیں۔

کیمپا کولا ڈیل ریلائنس کنزیومر پروڈکٹس نے 2022 میں پیور ڈرنک گروپ سے 22 کروڑ روپے میں کی تھی۔ اس ڈیل کے بعد، پہلے دیوالی پر پروڈکٹ کو لانچ کرنے کا منصوبہ تھا لیکن پھر اسے ہولی 2023 تک بڑھا دیا گیا۔ حال ہی میں، یہ 50 سال پرانا مشہور مشروب برانڈ کیمپا  نے کولا، اورنج اور لیمن ذائقوں میں لانچ کر دیا ہے۔ اس کا براہ راست مقابلہ پیپسی، کوکا کولا اور اسپرائٹ سے ہے جو پہلے سے مارکیٹ میں موجود ہیں۔


کیمپا کولا کے تین ذائقوں  کے اجراء کے بعد کولا مارکیٹ پر غلبہ حاصل کرنے والی دیگر کمپنیوں پر دباؤ ظاہر ہونا شروع ہو گیا ہے۔ دریں اثنا، درجہ حرارت میں اضافے اور سافٹ ڈرنکس کی مانگ میں اضافے کی وجہ سے، کوکا کولا نے اپنی مصنوعات کی قیمتوں میں کمی  کچھ ریاستوں میں کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ بزنس اسٹینڈرڈ کے مطابق کمپنی نے 200 ایم ایل کی  بوتل کی قیمت میں 5 روپے کی کمی کی ہے۔

رپورٹ کے مطابق کوکا کولا کمپنی کی جانب سے قیمت کم کرنے کے فیصلے کے بعد مدھیہ پردیش، تلنگانہ اور مہاراشٹرا جیسی ریاستوں میں 200 ایم ایل کی بوتل جس کی قیمت پہلے 15 روپے تھی، اب کم کر کے 10 روپے کر دی گئی ہے۔ اس کے ساتھ، خوردہ فروشوں کی طرف سے کوکا کولا کی شیشے کی بوتلیں رکھنے کے لیے ادا کیے گئے کریٹ ڈپازٹ کو بھی معاف کر دیا گیا ہے، جو عام طور پر 50 سے 100 روپے کے درمیان ہوتا ہے۔ 


اہم بات یہ ہے کہ مشروبات کے زمرے میں کیمپا کولا ہندوستان کا اپنا برانڈ ہے۔ پیور ڈرنک گروپ 1949 سے 1970 کی دہائی کے اوائل تک ہندوستان میں کوکا کولا کا واحد تقسیم کار تھا۔ اس کے بعد، کوکا کولا کے ملک سے باہر ہونے کے بعد، پیور ڈرنکس نے اپنا برانڈ کیمپا کولا لانچ کیا اور جلد ہی یہ اس شعبے میں ٹاپ برانڈ بن گیا۔ اس کا نعرہ 'دی گریٹ انڈین ٹسٹ' اس وقت بہت مشہور تھا جس نے اب زبردست واپسی کی ہے۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;