لکھنؤ سمیت ملک کے تین ہوائی اڈوں کا انتظام اڈانی گروپ کے سپرد

اڈانی گروپ کے پاس ہوائی اڈوں کے دیکھ بھال، مینجنٹ اور ڈیولپمنٹ کا اختیار ہوگا، جبکہ ان ہوائی اڈوں سے حاصل آمدنی پر کمپنی کا اختیار ہوگا

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: احمد آباد، لکھنؤ او ر منگلورو ہوائی اڈوں کی دیکھ بھال کا اختیار پچاس سال کے لیے اڈانی گروپ کو مل گیا ہے۔ ایر پورٹ اتھارٹی آف انڈیا (اے اے آئی) نے جمعہ کے روز بتایا کہ اڈانی گروپ کی اکائیوں کے ساتھ تینوں ہوائی اڈوں کے لیے آج کانسیشن اگریمنٹ پر دستخط کئے گئے ہیں۔

ان ہوائی اڈوں کی دیکھ بھال پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ کی بنیاد پر کیا جائے گا۔ اڈانی گروپ کے پاس ہوائی اڈوں کے دیکھ بھال، مینجنٹ اور ڈیولپمنٹ کا اختیار ہوگا۔ ان ہوائی اڈوں سے حاصل آمدنی پر کمپنی کا اختیار ہوگا۔

اڈانی گروپ نے پہلی مرتبہ ہوائی اڈہ کے کاروبار میں قدم رکھا ہے۔ اس نے بتایا کہ اس کی اکائیاں اڈانی لکھنؤ ہوائی اڈہ لمیٹیڈ، اڈانی احمدآباد بین الاقوامی ہوائی اڈہ لمیٹیڈ اور اڈانی منگلورو ہوائی اڈہ لمیٹیڈ نے تینوں ہوائی اڈوں کے لیے متعلقہ الگ الگ معاہدوں پر دستخط کئے۔ یہ معاہدے پچاس سال کے لیے کئے گئے ہیں۔

اے اے آئی نے گذشتہ برس چھ ہوائی اڈوں کی دیکھ بھال پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ کے تحت پرائیوٹ کمپنیوں کو سونپنے کے لیے ٹنڈر جاری کیا تھا۔ اس میں احمد آباد، لکھنؤ اور منگلورو کے علاوہ جے پور، گوہاٹی اور تریوندرم ہوائی اڈے شامل تھے۔ تمام چھ ہوائی اڈوں کے لئے اڈانی گروپ نے کامیاب بولی لگائی تھی۔ ان میں تین ہوائی اڈوں کے لیے جمعہ کو معاہدوں پر دستخط ہوئے۔

اے اے آئی نے بتایا کہ دیکھ بھال کا حق کے بدلے اڈانی گروپ سے اسے یک مشت رقم ملے گی اس کا استعمال پرانے ہوائی اڈوں کے دیکھ بھال اور ڈیولپمنٹ اور نئے ہوائی اڈے بنانے کے لیے کیا جائے گا۔