میرے ہاتھوں میں سدھارتھ نے دم توڑا، کیسے جیوں گی اب؟: شہناز گل کا درد

مشہور اداکار سدھارتھ شکلا کا کل دل کا دورہ پڑنے سے انتقال ہو گیا اور آج 11بجے ان کی لاش ان کے گھر والوں کو ملے گی لیکن اس بیچ ان کی دوست شہناز گل کا برا حال ہے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

پوسٹ مارٹم کے بعد آج صبح 11 بجے بالی وڈ کے مشہور نوجوان اداکار سدھارتھ شکلا کی لاش ان کے گھر والوں کو مل جائے گی جس کے بعد وہ ان کی آخری رسومات ادا کریں گے۔ سدھارتھ کی ماں اور گھر والوں کے ساتھ پوری فلمی دنیا کو ان کی موت کاغم ہے لیکن ان کی قریبی دوست شہناز گل کا برا حال ہے اور اب ان کا ایک ایسا بیان سامنے آ یا ہے جس نے سب کو پوری طرح ہلا دیا ہے۔

شہناز کے والد نے خود بتایا کہ شہنا ز نے ان سے کہا کہ ’’میں اب کیسے جیوں گی پاپا، وہ میرے ہاتھوں میں دنیا چھوڑ کر چلا گیا ۔‘‘ واضح رہے شہناز گل کئی مرتبہ سدھارتھ سے اپنی محبت کا اظہار کر چکی ہیں اور اب سدھارتھ کے انتقال پر وہ پوری طرح ٹوٹ چکی ہیں اور ان کے والد کا کہنا ہے کہ ’’رو رو کر ان کی بیٹی کا برا حال ہے۔‘‘اس نے ان سے کہا ’’پاپا میرے ہاتھوں میں اس نے دم توڑا ہے، وہ میرے ہاتھوں میں دنیا چھور کر چلا گیا ، میں اب کیسے جیوں گی ، میں کیسے رہوں گی۔‘‘


میڈیا رپورٹس کے مطابق شہنا ز کے والد نے بتایا’’شہناز صبح کو نارملی سدھارتھ کو اٹھانے گئی تو اس نے رسپانڈ نہیں کیا ۔ اس نے اسے گودی میں پکڑے رکھا پھر بھی سدھارتھ کی جانب سے کوئی رد عمل نہیں ہوا تو پھر شہناز نے سدھارتھ کے پورے گھر کو بلایا جو وہاں آس پاس رہتے ہیں اور پھر اسے ہسپتال لے جایا گیا ۔ شہناز کہہ رہی ہے کہ وہ (سدھارتھ) نہیں ہے میں کیسے رہوں گی۔‘‘

شہناز کے والد نے کہا کہ کہ انہیں کبھی اس بات کی فکر نہیں ہوئی کہ ان کی بیٹی ممبئی میں اکیلی رہتی ہے کیونکہ سدھارتھ اس کا ایک خاندان کی طرح خیال رکھتا تھا اور اب مجھے فکر ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔