نوازالدین ایک روپے میں بن گئے ’منٹو‘

نندیتا داس نے کہا، اچھے اداکار اچھے کام کے بھوکے ہوتے ہیں اور بڑی سے بڑی رقم بھی ان کے لئے کوئی معنی نہیں رکھتی۔‘‘

قومی آوازبیورو

ممبئی: بالی ووڈ میں اپنے سنجیدہ کردار کے لئے معروف نوازالدین صدیقی نے اپنے آنے والی فلم منٹو کے لئے ایک روپے فیس لی ہے۔ بالی ووڈ کی ڈائریکٹر نندیتا داس نے متنازعہ ادیب سعادت حسن منٹو کی زندگی پر مبنی فلم منٹو بنائی ہے، نوازالدین صدیقی فلم میں منٹو کے کردار میں نظر آئیں گے۔

بتایا جارہا ہے کہ اس فلم کے لئے انہوں نے صرف ایک روپیہ بطور فیس کے طور پر لیا ہے۔ نوازالدین کا یہ فیصلہ نندیتا داس کے دل کو چھو گیا۔

نندیتا داس نے بتایا کہ یہ سخاوت کی ایک بڑی مثال ہے کہ کوئی اداکار آپ کی فلم میں اپنی عام فیس کے بغیر کام کر رہا ہے۔ بتایا جارہا ہے کہ فلم کے کم بجٹ کو مدِنظر رکھتے ہوئے نندیتا نے انہیں محض ایک روپے کی پیش کش کی تھی اور نواز الدین مان گئے۔

’منٹو‘ کے لئے رشی کپور، پریشراول، رنبیر شوری، دویا دت اور جاویداختر نے بھی کو ئی پیسہ نہیں لیا ہے۔ نندیتا داس نے بتایا کہ ’’رشی کپور نے پہلی میٹنگ میں ہی اس فلم میں کام کرنے کے لئے حامی بھر لی اور فیس کے بارے میں پوچھا تک نہیں، اچھے اداکار اچھے کام کے بھوکے ہوتے ہیں اور جب ان کے پاس مرضی کا پروجیکٹ آئے تو وہ کسی بھی قیمت پرسمجھوتا نہیں کرتے، اُن کے لئے تب بڑی سے بڑی رقم بھی کوئی معنی نہیں رکھتی‘‘۔

برصغیر کے معروف مصنف سعادت حسن منٹو کی زندگی پر مبنی یہ فلم ستمبر کو ریلیز ہونے جا رہی ہے۔

(یو این آئی ان پٹ کے ساتھ)