یوم پیدائش پر مینا کماری کے اعزاز میں گوگل کا ڈوڈل

گوگل نے مینا کماری کا جو ڈوڈل بنایا ہے اس میں وہ آسمان میں بے شمار ستاروں کے درمیان نظر آ رہی ہیں اور وہ لال ساڑی زیب تن کئے ہوئے ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

گوگل نے عظیم شخصیات کو اپنے مخصوص انداز میں خراج تحسین پیش کرنے کی روایت کو برقرار رکھتے ہوئے بالی ووڈ کی ٹریجڈی کوین یعنی کہ ملکۂ جذبات مینا کماری کے اعزاز میں آج ڈوڈل بناکر یاد کیا۔ ہندوستانی سنیما کی خوبصورت اداکارہ کی آج 85 ویں یوم پیدائش ہے۔

مینا کماری نے بالی ووڈ میں تقریباً 3 دہائیوں تک راج کیا۔ انہیں صاحب بی بی اور غلام، پرینیتا، پھول اور پتھر، دل ایک مندر، کاجل اور پاکیزہ جیسی فلموں میں شاندار اداکاری کے لئے یاد کیا جاتا ہے۔

مینا کماری ایک ایسی اداکارہ تھیں جنہوں نے زندگی میں درد ہی درد پایا لیکن اس درد کو انہوں نے اپنی اداکاری کی جان بنا ڈالا۔ ان کے مداحوں کا کہنا ہے کہ مینا کماری جس کھنک دار آواز کی مالک تھیں ویسی آواز دنیا میں کسی اور کی نہ ہوئی اور نہ کبھی ہوگی۔
فلم پرینیتا میں مینا کماری اور اشوک کمار
فلم پرینیتا میں مینا کماری اور اشوک کمار

گوگل نے جو مینا کماری کا ڈوڈل بنایا ہے اس میں وہ آسمان میں بے شمار ستاروں کے درمیان نظر آ رہی ہیں اور وہ لال ساڑی زیب تن کئے ہوئے ہیں۔ ڈوڈل میں جو ان کا چہرہ ہے وہ اس وقت کا محسوس ہو رہا ہے جب انہوں نے اداکاری کی بلندیوں کو چھونا شروع کیا تھا۔ فلم پرینیتا جس میں مینا کماری نے ایک بنگالی لڑکی کا کردار ادا کیا تھا اس میں انہوں نے زیادہ تر ساڑی پہنی تھی۔ اس فلم کے لئے انہیں فلم فیئر ایوارڈ دیا گیا تھا جو کہ بالی ووڈ کی کسی اداکارہ کو دیا جانے والا پہلا فلم فیئر ایوارڈ تھا۔

مینا کماری نے بہترین اداکارہ کے چار ایوارڈ حاصل کئے تھے اور سال 1963 کے 10 ویں فلم فیئر ایوارڈ میں تو انہوں نے تاریخ رقم کر دی تھی۔ اس سال مینا کماری کی تین فلمیں ’صاحب بی بی اور غلام‘، ’آرتی‘ اور ’میں چپ رہوں گی‘ پردہ سیمیں پر ریلیز ہوئیں تھیں اور بہترین اداکارہ کے تمام نامینیشن (نامزدگی) انہیں کے نام تھے۔ آخر میں انہیں صاحب بی بی اور غلام کے لئے بہترین اداکارہ کا ایوارڈ دیا گیا۔

Published: 1 Aug 2018, 10:19 AM
next