بدلتا دبئی: رمضان میں روزے کے اوقات میں صارفین کو کھانا دینے کی اجازت

اس سال دبئی میں ریستورانوں کی اسکریننگ نہیں کی جائے گی اور روزے کے اوقات کے دوران انھیں صارفین کو کھانا دینے کے لیے کسی پیشگی اجازت نامے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

متحدہ عرب امارات کی راجدھانی دبئی میں رمضان المبارک میں ریستورانوں کے لیے قواعد وضوابط میں تبدیلی کی گئی ہے اور انھیں روزے کے اوقات کے دوران بھی صارفین کو کھانے مہیّا کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق دبئی کے محکمہ اقتصادی ترقی (دبئی اکانومی) نے ایک اعلامیے میں بتایا ہے کہ اس سال ریستورانوں کی اسکریننگ نہیں کی جائے گی اور روزے کے اوقات کے دوران انھیں صارفین کو کھانا دینے کے لیے کسی پیشگی اجازت نامے کی ضرورت نہیں ہوگی۔گزشتہ برسوں میں صرف پرمٹ رکھنے والے ریستوران ہی روزے کے اوقات میں صارفین کو کھانا دے سکتے تھے۔دبئی میں ریستورانوں کے لیے ان نئے قواعد وضوابط کا اطلاق یکم رمضان سےہوگا۔


واضح رہے کہ متحدہ عرب امارات نے اس سال بھی رمضان میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے سماجی اجتماعات پر پابندی عاید کردی ہے۔اجتماعی افطارپرپابندی ہوگی اور صرف ایک ہی خاندان کے افراد مل کر اکٹھے افطار کرسکیں گے۔مساجد کے باہر افطار خیمے لگانے یا کسی جگہ افطار کے لیے جمع ہونے والے افراد کو کھانے دینے پر بھی پابندی ہوگی۔

واضح رہےگزشتہ سال متحدہ عرب امارات نے اسرائیل کےساتھ سفارتی روابط شروع کردئے ہیں جس کے بعد سے یو اےای کی پالیسیوں میں زبردست تبدیلی دیکھنےکو مل رہی ہے۔ رمضان کے لئے یہ فیصلہ بھی اسی کا حصہ نظر آ رہاہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 13 Apr 2021, 8:11 AM