تمام عمرہ زائرین مکہ مکرمہ میں داخلہ سے قبل کووِڈ-19 کی ویکسین لگوائیں، سعودی وزیر

سعودی عرب کے وزیرِ حج و عمرہ ڈاکٹر محمد صالح بن طاہر بنتن نے عمرہ زائرین کو ہدایت کی ہے کہ وہ مکہ مکرمہ میں آمد سے قبل کووِڈ-19 کی ویکسین لگوا لیں

تصویر بشکریہ العربیہ ڈاٹ نیٹ
تصویر بشکریہ العربیہ ڈاٹ نیٹ
user

قومی آوازبیورو

سعودی عرب کے وزیرِ حج و عمرہ ڈاکٹر محمد صالح بن طاہر بنتن نے عمرہ زائرین کو ہدایت کی ہے کہ وہ مکہ مکرمہ میں آمد سے قبل کووِڈ-19 کی ویکسین لگوا لیں۔

انھوں نے العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے پیشگی حفاظتی احتیاطی تدابیر کے پروٹوکولز پرعمل درآمد جاری رہے گا۔جو لوگ عمرہ ادا کرنے کے خواہاں ہیں، انھیں حفظ ماتقدم کے طور پر کووِڈ-19 کی ویکسین لگوالینی چاہیے۔‘‘

ڈاکٹر صالح کا کہنا تھا کہ ’’عازمینِ عمرہ کو ہر وقت چہرے پر ماسک پہن کر رکھنا ہوگا اور عازمین کے لیے مقررکردہ عمر کی حد کی پابندی برقرار رہے گی۔‘‘ سعودی حکام کے مطابق صرف 18 سے 50 سال کی عمر کے افراد کو عمرہ ادا کرنے کی اجازت ہے۔

سعودی عرب کے الاخباریہ ٹی وی نے بدھ کو اطلاع دی ہے کہ اب تک ایک لاکھ سے زیادہ افراد کو کورونا وائرس کی ویکسین لگائی جاچکی ہے۔ان میں سعودی شہری اور مکین دونوں شامل ہیں۔انھیں سعودی حکومت کی جانب سے امریکا کی دواساز فرم فائزر کی تیار کردہ ویکسین مفت لگائی جارہی ہے۔

مناسک عمرہ کی ادائی کے دوران میں مسجد الحرام میں سماجی فاصلہ اختیارکرنے کی پابندی برقرار رہے گی۔مسجد الحرام کے صحنوں اور ہالوں کو روزانہ ڈھائی ہزار لٹر سے زیادہ ماحول دوست جراثیم کش محلولات سے مصفا کیا جارہا ہے۔

مسجدالحرام کے مختلف حصوں میں میڈیکل ٹیمیں بھی مقرر کی گئی ہیں اور کورونا وائرس کے کسی بھی مشتبہ کیس کی صورت میں طبّی معائنے اورانھیں الگ تھلگ رکھنے کے لیے ایک کمرا مختص کیا گیا ہے۔

الحرمین الشریفین کے انتظامی امور کی صدارتِ عامہ کے ترجمان نے قبل ازیں العربیہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ تمام زائرین کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے پیشگی حفاظتی احتیاطی تدابیر پرعمل درآمد کیا جارہا ہے۔واضح رہے کہ سعودی عرب نے نومبر2020ء میں کورونا وائرس کی وَبا کی شدت میں کمی کے بعد سخت پابندیوں کے ساتھ زائرین کوعمرہ ادا کرنے کی اجازت دے دی تھی۔

بشکریہ العربیہ ڈاٹ نیٹ

قومی آواز اب ٹیلیگرام پر پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


    next