سعودی عرب نے نئے اسٹرین کے باعث عائدسفری پابندی ختم کیں

کورونا وائرس کی نئی اسٹرین پھیلنے کے پیش نظر 21 دسمبر کو بین الاقوامی پروازیں اور سمندری اور زمینی راستے بند رکھنے کا اعلان کیا تھا۔

فائل تصویر آئی اے این ایس 
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

سعودی عرب نے اتوار کے روز کووڈ- 19 کی نئی شکل پھیلنے کے باعث ملک میں داخل ہونے پر عائد پابندی ختم کردی۔

ایس پی اے نیوز ایجنسی نے وزارت داخلہ کے حوالے سے بتایا کہ سعودی عرب نے دنیا کے متعدد ممالک میں کورونا وائرس کی نئی اسٹرین پھیلنے کے پیش نظر 21 دسمبر کو بین الاقوامی پروازیں اور سمندری اور زمینی راستے بند رکھنے کا اعلان کیا تھا۔ بعد میں اس پابندی کی میعاد میں توسیع کردی گئی تھی۔ ملک میں مقامی وقت کے مطابق کل صبح گیارہ بجے سے بین الاقوامی پروازوں کا آپریشن دوبارہ شروع کردیا گیا۔

نیوز ایجنسی کا کہنا تھا کہ برطانیہ اور جنوبی افریقہ سمیت ان تمام ممالک سے آنے والے لوگوں کو سعودی عرب میں داخل ہونے سے پہلے کم از کم 14 دن اپنے ان ممالک کے باہر گزارنا پڑے گا، جہاں کورونا وائرس کی نئی شکل پائی گئی ہے۔ ایسے مسافروں کو کورونا وائرس کے لیے پولیمریز چین ری ایکشن (پی سی آر) ٹیسٹ کی منفی رپورٹ پیش کرنی ہوگی۔

دیگر ممالک کے مسافروں کو تین سے سات دنوں تک قرنطینہ میں رہنا ہوگا اور پی سی آر ٹیسٹ کا نتیجہ بھی دکھانا ہوگا۔

واضح ر ہے کہ جنوب مشرقی برطانیہ میں دسمبر میں سارس سی او وی-2 کی ایک نئی شکل پائی گئی تھی، جو موجودہ کورونا وائرس سے 70 فیصد زیادہ متعدی ہوسکتی ہے۔ برطانیہ سے متعدد ممالک کے فضائی خدمات معطل کرنے کے باوجود یہ نئی شکل پورے یورپ میں اور دیگر مقامات پر پھیلنے کا خدشہ ہے۔

قومی آواز اب ٹیلیگرام پر پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next