سعودی عرب: دنیا کا مہنگا ترین انجکشن ایک بچی کو ’مفت‘ میں لگایا گیا

الشہرانی کا کہنا ہے کہ میری بیٹی کا علاج کنگ فیصل اسپیشلسٹ اسپتال میں ہو رہا ہے، حکومت نے اس کی زندگی کے لیے مجوزہ 80 لاکھ کے انجکشن کا بندوبست آسانی سے کر دیا، بلاشبہ سعودی عرب میں انسان انمول ہے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

ریاض: سعودی شہری مساعد الشہرانی نے کہا ہے کہ کنگ فیصل اسپیشلسٹ اسپتال نے اپنے یہاں زیر علاج میری بچی کو 80 لاکھ ریال کا ایک انجکشن مفت فراہم کیا ہے۔ بچی کے والد نے بتایا کہ ان کی بچی عضلات کے موروثی مرض میں مبتلا ہے، اسے دنیا کا مہنگا ترین انجکشن تجویز کیا گیا جس کا نام زولگنسما ہے۔ سعودی ذرائع ابلاغ کے مطابق الشہرانی نے اس حوالے سے اپنے اکاؤنٹ پر جو ٹوئٹ کیا ہے وہ سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہا ہے۔

الشہرانی نے لکھا ہے کہ میری بیٹی کا علاج کنگ فیصل اسپیشلسٹ اسپتال میں ہو رہا ہے، حکومت نے اس کی زندگی کے لیے مجوزہ 80 لاکھ کے انجکشن کا بندوبست آسانی سے کر دیا، بلاشبہ سعودی عرب میں انسان انمول ہے۔ یاد رہے کہ مذکورہ انجکشن موروثی خرابی سے پیدا ہونے والے مہلک مرض کی مؤثر دوا ہے، یہ مرض انسانی عضلات کو اس حد تک کمزور کر دیتا ہے کہ وہ چلنے پھرنے کے قابل نہیں رہتا۔


امریکی حکام نے سال 2019 میں مذکورہ دوا کی منظوری دی تھی جسے نوفارتیس کمپنی سوئٹزر لینڈ میں تیار کرتی ہے، عام لوگوں سے اس کی قیمت 2.1 ملین ڈالر وصول کی جاتی ہے، اسے اس وقت دنیا کا سب سے مہنگا ترین انجکشن مانا جاتا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔