مسجد حرام میں گاڑیوں کی آمد ورفت کے لیے نیا میکانزم، مناسک عمرہ کا ورچوئل تجربہ

انتظامیہ نے مسجد حرام میں گاڑیوں کی نقل وحرکت کے پیش نظر مسجد کے بیرونی مقامات میں متعدد مقامات پر پارکنگ اسٹینڈ قائم کیے ہیں جہاں زائرین کو مفت کار پارکنگ کی سہولت فراہم کی جائے گی

مسجد حرام میں گاڑیوں کی آمد ورفت کے لیے نیا میکانزم
مسجد حرام میں گاڑیوں کی آمد ورفت کے لیے نیا میکانزم
user

قومی آوازبیورو

جنرل پریزیڈنسی الحرمین الشریفین کے ٹرانسپورٹ امور کے معاون اسامہ سمکری نے بتایا ہے کہ انتظامیہ نے مسجد حرام میں گاڑیوں کی نقل وحرکت کے پیش نظر مسجد کے بیرونی مقامات میں متعدد مقامات پر پارکنگ اسٹینڈ قائم کیے ہیں جہاں زائرین کو مفت کار پارکنگ کی سہولت فراہم کی جائے گی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے اسامہ سمکری نے بتایا کہ مسجد حرام کے جنوبی اور مغربی اطراف سے آنے والے زائرین اور معتمرین کے لیے 'کدی پارکنگ اسٹینڈ اور شاہ عبدالعزیز وقف کو پارکنگ کے لیے مختص کیا گیا ہے جب کہ مشرقی اور شمالی اطراف سے آنے والوں کے لیے الششہ خلف بن دائود پارکنگ مختص کیا گیا ہے۔

مسجد حرام میں گاڑیوں کی آمد ورفت کے لیے نیا میکانزم، مناسک عمرہ کا ورچوئل تجربہ

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ مسجد حرام کے نمازیوں کو نئی احتیاطی تدابیر سے آگاہی کے لیے 'اعتمرنا' موبائل ایپ متعارف کرائی گئی ہے جس سے مسجد حرام کے نمازی اور معتمرین استفادہ کر سکتے ہیں۔ اس ایپ کو استعمال کرکے زائرین اور معتمرین کی با آسانی مسجد حرام میں آمدورفت ممکن ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ جنرل آٹوموبائل سنڈیکیٹ نے مسافروں کی حفاظت اور صحت کے لیے پارکنگ، مسافرخانے اور بسوں کے لیے تمام احتیاطی تدابیر، سماجی فاصلے پر عمل پیرا ہونے کے اقدامات، ماسک پہننے اور تمام زائرین اور مسافروں کے لیے جراثیم کش اسپرے کو لازمی قرار دیا ہے۔

ادھر حرمین شریفین کی جنرل پریزیڈینسی کی طرف سے مسجد حرام اور مسجد نبویﷺ میں آمد ورفت کے لیے زائرین عمرہ مناسک کا ورچوئل تجربہ کیا گیا ہے۔

حرمین شریفین کی جنرل پریزی ڈینسی کے چیئرمین ڈاکٹر عبدالرحمان السدیس کی ہدایت پر انتظامیہ نے عمرہ زائرین کے مناسک عمرہ سعی اور دیگر مناسک کے موقعے پر ہنگامی ایس او پیز سے آگاہی کا مربوط پروگرام وضع کیا گیا ہے۔ مناسک عمرہ کے مقامات پر دن میں 10بار جراثیم کش اسپرے کیے جا رہا ہے اور اس مقصد کے لیے 450 کارکن مختص کیے گئے ہیں۔ مسجد حرام میں 2500 لیٹر جراثیم کش اسپرے کیا جا رہا ہے جب کہ ہاتھوں سے مسجد حرام اور اس کے صحن کو صاف رکھنے کے لیے 300 رضاکاروں پر مشتمل عملہ کام کر رہا ہے۔

اس نے مطاف کے صحن سے تمام قالینوں کو ہٹا دیا گیا ہے۔ زائرین کو کعبہ اور حجر اسود کے قریب جانے سے روک دیا گیا ہے۔ جب کی زم زم کے حصول کے لیے راستے اور سماجی فاصلوں کی نشاندہی کا انتظام کیا گیا ہے۔

(العربیہ ڈاٹ نیٹ)

    next