’یوم ترویہ‘ پرمشاعر مقدسہ میں حجاج کرام زمزم کیسے حاصل کریں گے؟

یوم ترویہ پر اب زمزم کے حصول کا طریقہ کار تبدیل ہو چکا ہے، حکومت کی طرف سے مناسک حج کے تمام مقامات پر زمزم فراہم کرنے کے لیے پانی کے کولر نصب کیے ہیں مگر اس بار ان کولروں کو ہٹا دیا گیا ہے

حجاج کرام زمزم کیسے حاصل کریں گے؟
حجاج کرام زمزم کیسے حاصل کریں گے؟
user

قومی آوازبیورو

اسلامی تاریخ میں حج کے موقع پر حجاج کرام مشاعر مقدسہ میں زمزم کے حصول کے مختلف طریقے اپناتے رہے ہیں۔ اس حوالے سے مشاعر مقدسہ میں کئی نئے طریقے بھی اخیار کیے گئے۔ پرانے وقتوں میں مشاعر میں مٹی کے برتنوں میں زمزم رکھا جاتا اور حجاج کرام ترویہ کے روز اپنی پیاس وہاں سے بجھاتے۔ 8 ذی الحج کو ہونے والے یوم ترویہ پر اب زمزم کے حصول کا طریقہ کار تبدیل ہو چکا ہے۔ حکومت کی طرف سے مناسک حج کے تمام مقامات پر زمزم فراہم کرنے کےلیے پانی کے کولر نصب کیے ہیں مگر اس بار ان کولروں کو ہٹا دیا گیا ہے۔

کرونا کی وبا کے پیش نظر وزارت صحت کے وضع کردہ ایس اوپیز پر عمل درآمد کرتے ہوئے رواں موسم حج پر الگ سے زمزم کولروں یا ٹینکیوں میں رکھنے کے پیک شدہ بوتلوں میں حجاج کرام کو دیا جائے گا۔ یہ ایک بوتل ایک ہی فرد کے لیے ہوگی اور اسے ایک ہی وقت پی سکتا ہے۔

تاریخ مکہ مرکز کے ڈائریکٹر جنرل فواز الدھاس نے العربیہ ڈاٹ‌ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پرانے وقتوں میں حجاج کرانے منیٰ سے پانی اپنے ساتھ لے کر ترویہ کے لیے نکلتے۔ بعد میں حج کے موقعے پر رضاکارانہ کام کرنے والے افراد نے حجاج کو ان کے کیمپوں‌ میں زمزم کی فراہمی شروع کی۔ اس طرح حجاج کرام منیٰ میں ترویہ کے لیے رضاکاروں سے پانی حاصل کرتے۔

الدھاس کا مزید کہنا تھا کہ مشعر منیٰ میں آب رسانی کے کئی ذرائع تھے۔ ایک طریقہ سقایا کے ذریعے پانی پہنچانے کا تھا۔ یہ لوگ آب خورے پانی سے بھر کر حجاج تک پہنچاتے۔ بعد میں حجاج کے گذرنے کے راستوں کے اطراف میں پانی کے مشکیزے لگائے گئے۔ یہ مشکیزے 50 سال قبل تک موجود تھے۔

انہوں‌ نے کہا کہ موجودہ آل سعود کی حکومت کے عہد میں حج کے حوالے سے غیرمعمولی تبدیلیاں آئیں۔ حکومت نے حجاج کرام کو زیادہ سے زیادہ سہولت اور آرام مہیا کرنے کے کیے جدید سہولیات متعارف کرائیں۔ آج حجاج کرام کو تازہ زمزم بوتلوں میں ان کی ضرورت کے مطابق حج کے موقعے پر فراہم کیا جا رہا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ

Published: 29 Jul 2020, 2:58 PM
next