حج 2021: فریضہ حج کی ادائیگی کو محفوظ بنانے کے لیے سعودی حکومت کی تیاریاں شروع

عرب میڈیا رپورٹ کے مطابق سعودی حکومت نے حج سیزن کے لیے 13اسپتال مخصوص کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور تمام حجاج کوکھانا ان کے کمروں میں ہی پہنچانے کا انتظام کیا جائے گا۔

علامتی تصویر
علامتی تصویر
user

یو این آئی

مکہ مکرمہ: عالمی وبا کورونا کے دوران حج کو محدود رکھنے کے درمیان فریضہ حج کی ادائیگی کے سلسلے میں سعودی عرب حکومت نے تیاریاں شروع کردی ہیں۔ عرب میڈیا رپورٹ کے مطابق سعودی حکومت نے حج سیزن کے لیے تیاریاں شروع کردیں، اس سلسلے میں 13اسپتال مخصوص کئے جائیں گے جب کہ تمام حجاج کوکھانا ان کے کمروں میں ہی پہنچایا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹرامورصحت نے کہا ہے کہ مکہ مکرمہ اور مشاعر مقدسہ میں 13اسپتال مخصوص کیے جائیں گے اور حجاج کے رہائشی خیموں میں سماجی فاصلے کا خیال رکھا جائے گا جبکہ تمام حجاج کوکھانا ان کے کمروں میں ہی پہنچایا جائے گا۔ یاد رہے کہ سعودی عرب نے کورونا کی صورتحال کے پیش نظر رواں سال بھی حج محدود رکھنے کا اعلان کرتے ہوئے بیرون ملک زائرین کو حج کی اجازت نہیں دی۔


حج 2021 کے تعلق سے گزشتہ دنوں سعودی وزارت خارجہ نے کہا تھا کہ رواں سال مجموعی طور پر 60 ہزار سعودی عرب کے شہریوں اور رہائش پذیر افراد کو حج ادا کرنے کی اجازت دی جائے گی، لوگوں کی حفاظت اور صحت کو مدنظر رکھتے ہوئے اس وقت کچھ احتیاطی اقدامات کیے ہیں۔ واضح رہے کہ سعودی عرب میں مقیم ملکی و غیر ملکی شہریوں کی جانب سے اب تک حج کے لیے 4 لاکھ سے زائد درخواستیں موصول ہو چکی ہیں، ملنے والی درخواستوں میں سے 60 فیصد مرد حضرات کی ہیں جبکہ 40 فیصد خواتین کی ہیں۔ درخواستوں کی حتمی منظوری کا مرحلہ 13 ذی القعدہ تک جاری رہے گا جس کے بعد صرف 60 ہزار افراد کو اگلے مرحلے کے لیے منتخب کیا جائے گا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔