مسجد حرام کی دن میں 10 بار صفائی، طہارت کے لیے 4 ہزار رضا کار تعینات

صدارت عامہ برائے امور حرمین شریفین کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مسجد حرام کی صفائی ستھرائی پر چار ہزار مرد و خواتین پر مشتمل عملہ تعینات ہے جو ایک دن میں مسجد کی دس بار صفائی کرتا ہے

مسجد الحرام کی صفائی
مسجد الحرام کی صفائی
user

قومی آوازبیورو

الریاض: صدارت عامہ برائے امور حرمین شریفین کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مسجد حرام کی صفائی ستھرائی پر چار ہزار مرد و خواتین پر مشتمل عملہ تعینات ہے جو ایک دن میں مسجد کی دس بار صفائی کرتا ہے۔ اس دوران مسجد کو جراثیم سے پاک کرنے کے لیے جراثیم کش اسپرے کا باقاعدگی کے ساتھ چھڑکاؤ کیا جاتا ہے۔

صدارت عامہ برائے امور حرمین کے ترجمان مواصلات و میڈیا امور کے سیکرٹری ہانی حسنی حیدر کا کہنا ہے کہ معتمرین کی آمد کے پیش نظر مسجد حرام اور مسجد نبوی کے امور کے ذمہ دار ادارے نے مقدس مقامات کے حوالے سے اپنے پروگرام کے مطابق کوششیں تیز کردی ہے ہیں تاکہ مملکت کے اندر اور باہر سے آنے والے زائرین کی آمد کے عمل کو آگے بڑھایا جا سکے۔


ان کا کہنا تھا کہ صدارت عامہ برائے حرمین کے چیئرمین الشیخ عبدالرحمان السدیس کی ہدایت پر مسجد حرام میں صفائی اور دیگر امور کے لیے منظم منصوبہ بندی اور طریقہ کار وضع کیا گیا ہےتاکہ ان کی معتمرین کی حفاظت کو یقینی بنایا جاسکے اور مناسک کی ادائی میں انہیں آسانی اور سہولت فراہم کی جاسکے۔

ترجمان نے وضاحت کی کہ حرمین انتظامیہ روزانہ 60،000 تک معتمرین کا استقبال کر رہی ہے۔ معتمرین کی خدمات کے ایک مربوط نظام، احتیاطی تدابیر اختیار کی جا رہی ہیں۔ جگہ جگہ زائرین کو پوسٹر کے ذریعے جسمانی فاصلہ رکھنے کی ہدایت کی دی جا رہی ہے. طواف کے لیے خصوصی افراد کے لیے الگ ٹریک مقرر ہیں اور طواف کے دوران سنت نماز کی ادائی کے لیے مصلوں کے نشان بنائے گئے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔