کیرالہ: دو سال سے پریکٹس کر رہی ’فرضی وکیل‘ کا پردہ فاش! ہائی کورٹ کا پیشگی ضمانت دینے سے انکار

کیرالہ میں دو سال سے پریکٹس کر رہی ایک خاتون جانچ کرنے پر فرضی پائی گئی۔ اس کے بعد جمعہ کے روز اس کی پیشگی ضمانت کے لئے دی گئی درخواست ہائی کورٹ نے مسترد کر دی

کیرالہ ہائی کورٹ / آئی اے این ایس
کیرالہ ہائی کورٹ / آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

کوچی: کیرالہ میں دو سال سے پریکٹس کر رہی ایک خاتون جانچ کرنے پر فرضی پائی گئی۔ اس کے بعد جمعہ کے روز اس کی پیشگی ضمانت کے لئے دی گئی درخواست ہائی کورٹ نے مسترد کر دی۔ گزشتہ دو سالوں سے پریکٹس کر رہی خاتون وکیل کے سر پر اب گرفتاری کی تلوار لٹک رہی ہے۔

معاملہ کیرالہ کے شہر الاپوجا سے وابستہ ہے جہاں مقامی پولیس نے ایک خاتون وکیل سیسی زیویئر کی صداقت کے تعلق سے ایک شکایت پر جانچ کرنا شروع کی۔ جانچ شروع ہونے کے دو مہینے بعد ہائی کورٹ نے زیویئر کی پیشگی ضمانت کی درخواست نامنظور کر دی۔ عدالت نے یہ ہدایت بھی دی ہے کہ اگر وہ پولیس جانچ ٹیم کے سامنے پیش نہیں ہوتی ہے تو اسے گرفتار کیا جا سکتا ہے۔ زیویئر گزشتہ دو سالوں سے الاپوجا کی عدلت میں پریکٹس کر رہی تھی۔


فرضی وکیل کا پردہ فاش اس وقت ہوا جب الاپوجا بار ایسوسی ایشن کو اس کی حقیقی اہلیت کے حوالہ سے شبہات کا اظہار کرنے والا ایک گمنام خط موصول ہوا۔ اس کے بعد ہی سیسی زیویئر غائھب ہو گئی، جس کے بعد ایسوسی ایشن کو مجبوراً پولیس سے رابطہ قائم کرنا پڑا۔ اتفاف سے وہ سب سے زیادہ ووٹ حاصل کرکے ایسوسی ایشن کے لئے منتخب ہوئی تھی۔

جولائی میں الاپوجا شمال پولیس اسٹیشن کو بار ایسو سی ایشن سے زیویئر کی اہلیت پر شبہ ظاہر کرنے والا ایک خط موصول ہوا تھا۔ ایسو سی ایشن کے عہدیداران کے بیان لینے کے بعد ان کے خلاف معاملہ درج جانچ شروع کر دی گئی ہے۔ شکایت موصول ہونے کے بعد اس سے اپنا موبائل فون بند کر لیا اور اپنا سوشل میڈیا اکاؤنٹ بھی ڈلیٹ کر دیا۔ پولیس کی جانب سے جانچ شروع کرنے کے کچھ ہفتے بعد اسے آخری مرتبہ الاپوجا عدالتی کمپلیکس میں دیکھا گیا تھا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔