پرینکا گاندھی کے گھر پر سلامتی کی جانچ کا حکم دے دیا گیا ہے: امت شاہ

وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا ہے کہ کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کے گھر پر سلامتی کی چوک کے معاملے میں تین سیکورٹی اہلکاروں کو معطل کردیا گیا ہے اور اس کی اعلی سطحی جانچ کا حکم دیا گیا ہے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

نئی دہلی: مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے منگل کے روز کہا ہے کہ کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کے گھر پر سلامتی کی چوک کے معاملے میں تین سیکورٹی اہلکاروں کو معطل کردیا گیا ہے اور اس کی اعلی سطحی جانچ کا حکم دیا گیا ہے۔

امت شاہ نے منگل کو راجیہ سبھا میں ایس پی جی سلامتی ترمیمی بل پر ہوئی بحث کے جواب میں بتایا کہ اس معاملے میں تین سلامتی اہل کار معطل کر دیے گئے ہیں اور معاملہ کی اعلی سطحی جانچ کا حکم دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ پرینکا گاندھی کی رہائش پر چوک کا معاملہ 25 نومبر کا جب ایک کار ان کے گھر میں داخل ہو گئی تھی۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ کانگریس کے ممبر پارلیمنٹ اور پرینکا گاندھی کے بھائی راہل گاندھی اور ان کے شوہر رابرٹ وڈرا عام طور پر ان سے ملنے کے لئے سیدھے چلے جاتے ہیں اور ان کی گاڑیوں کو جانچ کے لئے روکا نہیں جاتا ہے۔ اس دن بھی سلامتی اہل کار کو اطلاع دی گئی تھی کہ راہل گاندھی کالے رنگ کی ٹاٹا سفاری میں ان سے ملنے کے لئے آئیں گے۔

امت شاہ نے مزید کہا کہ اس دن راہل گاندھی کے آنے کے وقت ہی ایک کالے رنگ کی ٹاٹا سفاری پرینکا گاندھی کی رہائش گاہ کے پاس آئی اور اندر داخل ہوگئی۔ بعد میں پتہ چلا کہ اس گاڑی میں کانگریس کی میرٹھ ضلع کی کارکن شاردا تیاگی آئیں تھیں۔ ان کے ساتھ کچھ اور لوگ بھی تھے۔ انہوں نے کہا کہ اس معاملے میں سیاست نہیں ہونی چاہئے۔