تیرہ سالہ کشمیری لڑکی تجمل اسلام نے دوسرا عالمی خطاب جیت کر تاریخ رقم کی

شمالی کشمیر کے باندی پورہ ضلع کے رہنے والے 13 سالہ تجمل نے مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں منعقدہ ورلڈ کک باکسنگ چیمپئن شپ کے انڈر 14 زمرے کے فائنل میں ارجنٹینا کی لالینا کو شکست دے کر طلائی تمغہ جیتا

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: ورلڈ جونیئر چمپئن تجمل اسلام نے کک باکسنگ ورلڈ چمپئن شپ میں طلائی تمغہ جیت کر دوسری بار تاریخ رقم کی۔ شمالی کشمیر کے باندی پورہ ضلع کے رہنے والے 13 سالہ تجمل نے مصر کے دارالحکومت قاہرہ میں منعقدہ ورلڈ کک باکسنگ چیمپئن شپ کے انڈر 14 زمرے کے فائنل میں ارجنٹینا کی لالینا کو شکست دے کر طلائی تمغہ جیتا۔ وہ میزبان مصر کے دو سرکردہ باکسروں کو شکست دے کر فائنل میں پہنچی۔ فائنل سے قبل تجمل کا مقابلہ فرانسیسی باکسر سے تھا۔

تجمل نے فتح کے بعد ٹویٹ کے ذریعے اپنی خوشی کا اظہار کیا۔ انہوں نے ٹویٹ میں لکھا ’’یہ میرے لیے قابل فخر لمحہ ہے۔ میں نے قاہرہ میں عالمی چیمپئن شپ کے انڈر 14 زمرے میں گولڈ میڈل جیتا ہے۔ اب میں دوسری بار عالمی چیمپئن بن گئی ہوں۔ میں ڈاکٹر بھی بننا چاہتی ہوں‘‘۔


واضح رہے کہ اس سے قبل انہوں نے اٹلی کے شہر اینڈریا میں منعقدہ 2016 کی ورلڈ کک باکسنگ چیمپئن شپ میں آٹھ سال کی عمر میں پہلی عالمی چیمپئن بننے کا اعزاز حاصل کیا تھا۔ وہ ایسا کرنے والی پہلی جونیئر بین الاقوامی باکسر تھیں۔ انہوں نے ضلع، ریاستی، قومی اور بین الاقوامی سطح پر کک باکسنگ مقابلوں کے سب جونیئر زمرے میں سونے کے تمغے بھی جیتے ہیں۔

قاہرہ میں 18 اکتوبر سے 24 اکتوبر تک منعقد ہونے والی اس چیمپئن شپ میں دنیا بھر کے باکسرز نے حصہ لیا، جس میں ہندوستان سے مختلف عمر اور وزن کی کیٹیگریز کے 30 کھلاڑی شامل ہوئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔