چنڈی گڑھ کی تہذیب، ثقافت، فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا ہر کوئی قائل ہے: عمران پرتاپ گڑھی

چنڈی گڑھ کے منی مزرعہ میں ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے عمران پرتاپ گڑھی نے کہا کہ ’’آج میں جواہرلال نہرو کے خوابوں کے شہر چنڈی گڑھ میں آیا ہوں۔‘‘

تصویر بذریعہ پریس ریلیز
تصویر بذریعہ پریس ریلیز
user

پریس ریلیز

آل انڈیا کانگریس کمیٹی اقلیتی شعبہ کے قومی صدر اور مشہور شاعر عمران پرتاپ گڑھی اپنے دو روزہ دورے پر پنجاب پہنچے۔ پنجاب کے دارالحکومت چنڈی گڑھ میں حکومت ہند کے سابق وزیر ریلوے اور کانگریس کے خزانچی پون کمار بنسل اور پنجاب کے صوبائی کانگریس کمیٹی کے زیر اہتمام منعقدہ پروگرام میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔

چنڈی گڑھ کے منی مزرعہ میں ایک پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے عمران پرتاپ گڑھی نے کہا کہ آج میں جواہرلال نہرو کے خوابوں کے شہر چنڈی گڑھ میں آیا ہوں، آج میں یہاں کسی انتخابی پروگرام میں نہیں بلکہ چنڈی گڑھ کے لوگوں سے ملنے آیا ہوں۔ چنڈی گڑھ کی تہذیب، ثقافت، فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا ہر کوئی قائل ہے، آج سے پہلے جب میں کسی بھی شہر میں جاتا تھا تو سوچتا تھا کہ اس شہر میں چاہنے والے کم ملیں گے اور جب میں کسی دوسرے شہر جاتا تھا تو بھی سوچتا تھا۔ لگتا ہے کہ اس شہر میں چاہنے والے ملیں گے لیکن آج جب میں چنڈی گڑھ آیا تو ایسا لگا کہ لوگوں سے ملا ہوں۔

چنڈی گڑھ کی تہذیب، ثقافت، فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا ہر کوئی قائل ہے: عمران پرتاپ گڑھی

اس دوران عمران پرتاپ گڑھی نے چنڈی گڑھ کے لوگوں سے اپیل کی کہ کچھ دنوں بعد بلدیاتی انتخابات ہونے والے ہیں، آپ کو حکمرانی کے بارے میں سب کچھ معلوم ہے۔ کانگریس اور بی جے پی حکومت میں کیا کیا تبدیلیاں آئی ہیں یہاں کے عوام کو سب علم ہے۔ بی جے پی حکومت کی تانہ شاہی، بیان بازی اور عوامی دشمن پالیسیوں کی وجہ سے ملک انتہائی برے دور سے گزر رہا ہے اور بے روزگاری بڑھ رہی ہے۔ مہنگائی آسمان پر ہے۔ بلدیاتی انتخابات میں بی جے پی کو شکست دے کر اپنے پیارے ملک کو ترقی کی راہ پر واپس بھیجنے کا کام شروع کریں، جس طرح آپ کی پڑوسی ریاست ہماچل پردیش کے عوام نے بی جے پی کو شکست دے کر کانگریس کو فتح دلائی ہے، یہ ایک واضح پیغام ہے کہ ملک میں بی جے پی حکومت کی پالیسیوں سے عوام پوری طرح پریشان ہو چکی ہے اور اب بی جے پی کو سبق سکھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

عمران پرتاپ گڑھی نے مزید کہا کہ ملک کے عوام کو مذہب کی بنیاد پر لڑا کر بھارتیہ جنتا پارٹی، آج چنڈی گڑھ کے اس خوبصورت اسٹیج پر جس طرح پون کمار بنسل، دلبر خان اور منیش بنسل عمران پرتاپ گڑھی کے ساتھ بیٹھے ہیں، بی جے پی حکومت نے عوام کے درمیان نفرت پھیلانے کا کام کیا ہے، سماجی محبت اور بھائی چارے کوختم کرنے کا کام کیا ہے۔ بی جے پی گھبرائی ہوئی ہے کہ اگر اس ملک کے تمام ہندو مسلمانوں نے بھائی چارے کے ساتھ میں رہنا شروع کر دیا تو اقتدار ہمارے ہاتھ سے جاتا رہے گا۔ عمران نے کہا کہ آج ہمارے ملک کا کسان سڑکوں پر بیٹھا ہے اور حکومت سے تینوں زراعت مخالف کالے قوانین کو واپس لینے کا مطالبہ کر رہا ہے اور اس معاملے میں کم از کم 400 کسانوں نے اپنی شہادت دی ہے لیکن بی جے پی حکومت اور ملک کے وزیراعظم نریندر مودی کو کسانوں کی پرواہ نہیں ہے صرف اپنے صنعتکار دوست امبانی، اڈانی کو فائدہ پہنچا رہے ہیں۔


سابق ریلوے وزیر اور کانگریس کے خزانہ کے صدر پون کمار بنسل نے اس موقع پر کہا کہ بی جے پی صرف جھوٹ بولنے کا کام کرتی ہے اور بی جے پی کے تمام لیڈر مل کر جھوٹ کا پروپیگنڈہ پھیلا رہے ہیں اور پھر ورلڈ گرو بننے کا خواب دیکھتے ہیں۔ لیکن بی جے پی نہیں جانتی کہ جھوٹ بولنے اورسچ بولنے میں کیافرق ہوتا ہے؟ آج جب ہمارے وزیر اعظم غیر ملکی دورے پر جاتے ہیں تو ان کے لیے ٹیکسیوں کا انتظام کیا جاتا ہے کہ وہ آئیں اور یہ سب دیکھیں۔ چنڈی گڑھ کے لوگوں کے مطالبے پر عمران پرتاپ گڑھی نے اپنی نظم ’کہاں سویا ہے چوکیدار‘ اور ’سندرہے ہم حساب لیں گے۔‘ اس موقع پر سلمان پرتاپ گڑھی، احمد خان، دلبر خان، واحد قریشی، حافظ احمد علی، شمیم علوی ،لیاقت علی ودیگر خاص طور پر ایک موجود رہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔