پاکستان: نواز شریف کی میڈیکل رپورٹ کی جانچ کے لیے بورڈ تشکیل

بورڈ کے ارکان کا بنیادی کام مسٹر شریف کے ڈاکٹر کی طرف سے پیش کردہ رپورٹس کا جائزہ لینا ہے اور سابق وزیراعظم کی جسمانی حالت اور پاکستان واپس جانے کی صلاحیت کے بارے میں ماہرانہ طبی رائے دینا ہے۔

نواز شریف، تصویر آئی اے این ایس
نواز شریف، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

اسلام آباد: پاکستان کے سابق وزیر اعظم نواز شریف کی صحت سے متعلق ان کے ڈاکٹر کی طرف سے جمع کرائے گئے طبی دستاویزات کی جانچ کے لیے محکمہ خصوصی صحت اور طبی تعلیم نے جمعہ کو ایک نو رکنی خصوصی میڈیکل بورڈ تشکیل دیا ہے۔ میڈیکل بورڈ نواز شریف کے ڈاکٹرز کی جانب سے جمع کرائے گئے طبی دستاویزات کی جانچ کی بنیاد پر اپنی رپورٹ اسپیشل ہیلتھ سکریٹری کو پیش کرے گا۔

بورڈ وفاقی کابینہ کی ہدایات پر تشکیل دیا گیا ہے اور اس کا اجلاس پروفیسر آف میڈیسن ڈاکٹر محمد عارف نعیم نے طلب کیا ہے۔ ان میں پروفیسر غیاث النبی طیب، پروفیسر ثاقب سعید، پروفیسر شاہد حمید، پروفیسر بلال ایس محی الدین، پروفیسر عنبرین حامد، پروفیسر شفیق الرحمن، ڈاکٹر مونا عزیز اور ڈاکٹر خدیجہ عرفان خواجہ شامل ہیں۔ بورڈ کے ارکان کا بنیادی کام مسٹر شریف کے ڈاکٹر کی طرف سے پیش کردہ رپورٹس کا جائزہ لینا ہے اور سابق وزیراعظم کی جسمانی حالت اور پاکستان واپس جانے کی صلاحیت کے بارے میں ماہرانہ طبی رائے دینا ہے۔


سابق وزیر اعظم نواز شریف نومبر 2019 میں علاج کے لیے لاہور ہائی کورٹ سے چار ہفتے کی ضمانت ملنے کے بعد پاکستان سے برطانیہ چلے گئے تھے۔ میڈیکل بورڈ کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ آئندہ پانچ دنوں کے اندر اپنی رپورٹ/ ماہرین طبی رائے خصوصی سکریٹری صحت کو پیش کرے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔