خبریں

یو پی حکومت میں وزیر راجبھر نے بی جے پی کو دیا 100 دن کا الٹی میٹم

اوم پرکاش راجبھر کا کہنا ہے کہ انھوں نے بی جے پی کو 100 دن کا وقت دیا ہے جس میں سے 12 دن گزر چکے ہیں۔ اگر وقت پر ان کی باتیں نہیں سنی گئیں تو ان کی پارٹی اتر پردیش کی سبھی 80 سیٹوں پر انتخاب لڑے گی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

اتر پردیش کی یوگی آدتیہ ناتھ حکومت میں وزیر اوم پرکاش راجبھر نے این ڈی اے میں شامل چھوٹی پارٹیوں کو توجہ نہ دیے جانے پر اعتراض ظاہر کرتے ہوئے بی جے پی کو 100 دن کا الٹی میٹم دیا ہے۔ این ڈی اے میں شامل سہیل دیو بہوجن سماج پارٹی کے صدر اوم پرکاش راجبھر کا کہنا ہے کہ انھوں نے بی جے پی کو 100 دن کا وقت دیا ہے جس میں سے 12 دن گزر چکے ہیں۔ وہ مزید کہتے ہیں کہ اگر اس درمیان ہماری باتیں نہیں سنی گئیں تو پھر این ڈی اے سے علیحدہ ہو کر اتر پردیش کی سبھی 80 سیٹوں پر انتخاب لڑیں گے۔

اوم پرکاش راجبھر نے یہ بیان 12 جنوری کو میڈیا سے بات چیت کے دوران دیا۔ انھوں نے کہا کہ ’’فی الحال ہم بی جے پی کے ساتھ ہیں، اگر بی جے پی ہمیں ساتھ رکھنا چاہتی ہے تو ہم بالکل ان کے ساتھ ہیں۔ لیکن اس کے لیے انھیں چاہیے کہ وہ ہماری بات سنیں اور چھوٹی پارٹیوں کو بے توجہی کا شکار نہ بنائیں۔‘‘ راجبھر کا یہ بھی کہنا ہے کہ ’’اگر وہ ہمیں ساتھ نہیں رکھنا چاہتے تو ہم زبردستی ان کے ساتھ نہیں رہیں گے۔ ہم اتر پردیش کی سبھی 80 سیٹوں پر انتخاب لڑنے کی تیاری کریں گے۔‘‘

قابل ذکر ہے کہ اوم پرکاش راجبھر لگاتار بی جے پی حکومت کے خلاف بیان دے رہے ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ پسماندہ طبقات کے مسائل پر وہ کوئی توجہ نہیں دے رہی۔ راجبھر اس بات سے بھی اکثر ناراض نظر آئے ہیں کہ ان کی باتوں کو بی جے پی اہمیت نہیں دیتی اور صرف تقسیم کرنے والی سیاست کو فروغ دے رہی ہے۔